جنرل ہسپتال کی پارکنگ فیس سکینڈل،اے ایم ایس اور ٹھیکیدار کے خلاف مقدمہ

  جنرل ہسپتال کی پارکنگ فیس سکینڈل،اے ایم ایس اور ٹھیکیدار کے خلاف مقدمہ

  

لاہور(اپنے نمائندے سے)اینٹی کرپشن لاہور ریجن اے کی جانب سے لاہور جنرل ہسپتال کی پارکنگ فیس کی مد میں عوام کو 12 کروڑ روپے کا چونا لگانے پر لاہور جنرل ہسپتال کے اے ایم ایس جعفر شاہ، ٹھیکیدار غلام مصطفی اور صابر حسین کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا۔ پرچی پر رکشہ کا نام مٹا کر موٹر سائیکل پارکنگ فیس 10 روپے کی بجائے 20 روپے وصول کی جاتی رہی، ایف آئی آر کے مطابق لاہور جنرل ہسپتال میں روزانہ دس ہزار موٹر سائیکل، 800 گاڑی آتی ہیں۔رات کے وقت آنیوالی گاڑیوں سے ڈبل فیس چارج کی جاتی ہے۔ اینٹی کرپشن حکام کے مطابق ٹھیکیدار غلام مرتضی نے لاہور میسرز مصطفی سروسز پرائیویٹ لمیٹڈ کے نام پر ٹھیکہ لیا ہوا تھا۔ٹھیکیدار غلام مرتضی نے دوران انکوائری دو سال میں چار کروڑ روپے چونا لگانے کا اعتراف کیا ہے۔

، ایم ایس جنرل ہسپتال کا تعین دوران تفتیش کیا جائے گا،اے ایم ایس جنرل ہسپتال، ٹھیکیداروں کی انکوائری آئی او اعتزاز منیر گوندل نے کی۔ڈائریکٹر اینٹی کرپشن لاہور ریجن اے احمر سہیل کیفی نے کہا کہ عوام کی جیبوں پر کسی کو ڈاکہ ڈالنے کی اجازت نہیں دی جائے گی، ڈاکہ مافیا کو کسی صورت بھی نہیں دی جائے گی،یہ مقدمہ ڈی جی اینٹی کرپشن محمد گوہر نفیس کی ہدایت پر درج کیا گیا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -