امریکہ کا اہم معلومات چرانے والی خاتون سمیت 5 چینی جاسوس پکڑنے کا دعویٰ

  امریکہ کا اہم معلومات چرانے والی خاتون سمیت 5 چینی جاسوس پکڑنے کا دعویٰ

  

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)سنگاپور کے ایک شہری نے امریکا میں چین کے جاسوس کی حیثیت سے کام کرنے کا اعتراف کیا ہے۔امریکا میں رہائش پذیر سنگاپور کے شہری جون وی یو پر الزام ہے کہ اس نے اپنے سیاسی مشاورت کے ادارے کی آڑ میں چینی خفیہ ایجنسی کیلئے قیمتی معلومات اکٹھی کیں۔امریکی محکمہ انصاف کے بیان کے مطابق جون وی یو نے گذشتہ روز ایک وفاقی عدالت میں 2015ء سے 2019 کے درمیان چینی خفیہ ایجنسی کے غیر قانونی ایجنٹ کی حیثیت سے کام کرنے کا اعتراف کیا ہے۔جون وی یو نے 2015ء میں اس وقت چینی خفیہ ایجنسی میں شمولیت اختیار کی جب وہ سنگاپور کی ایک اعلیٰ جامعہ میں پی ایچ ڈی کا طالب علم تھا۔ جون وی یو نے اعتراف کیا ہے کہ وہ اعلیٰ سیکیورٹی کلیئرنس رکھنے والے امریکی شہریوں سے رابطہ کرکے ان سے حساس معلومات حاصل کرنے کی کوشش کرتا تھا۔ انہیں 2019ء میں امریکا پہنچنے پر گرفتار کیا گیا تھا۔دوسری جانب امریکانے کہا ہے کہ چینی فوج سے تعلقات چھپانے کے الزام میں ایک خاتون چینی محقق کو بھی گرفتار کیا گیا ہے۔37 سالہ گرفتار خاتون کا نام جون تینگ بتایا گیا ہے۔یہ خاتون ان 4 چینی شہریوں میں شامل ہے جن پر گزشتہ دنوں چینی فوج میں خدمات انجام دینے کے بارے میں مبینہ غلط بیانی کرنے پر ویزا فراڈ کا الزام عائد کیا گیا تھا۔ جون تینگ کو امریکی ریاست کیلی فورنیا سے گرفتار کیا گیا ہے جبکہ امریکا نے سان فرانسسکو کے چینی قونصل خانے پر اسے پناہ دینے کا الزام بھی عائد کیا تھا۔

چینی جاسوس

مزید :

صفحہ اول -