چیف کمشنر اسلام آباد عامر احمد کو ایک ماہ میں اثاث وں کی تفصیل جمع کرانے کا حکم

چیف کمشنر اسلام آباد عامر احمد کو ایک ماہ میں اثاث وں کی تفصیل جمع کرانے کا ...

  

اسلام آباد (این این آئی)اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے سروس جوائن کرنے سے اب تک اپنے اثاثہ جات ڈکلیئر نہ کرنے پر چیف کمشنر اسلام آباد عامر کو ایک ماہ کے اندر اپنے اثاثہ جات کی تفصیل جمع کروانے کا حکم دیتے ہوئے متنبہ کہا ہے کہ ایک ماہ کے اندر اثاثہ جات ظاہر نہ کرنے پر ان کے خلاف سول سروس ڈسپلنری اینڈ ایفیشنسی رولز مجریہ 1973 کے تحت کارروائی کی جائیگی۔ اسٹیبلشمنٹ ڈویژن نے اپنے مراسلے میں لکھا کہ آپ (عامر احمد علی) نے سول سروس جوائن کرنے کے سے اب تک اپنے ذرائع آمدن اور اثاثہ جات ظاہر نہیں کئے جو سول سرونٹ کیلئے گورنمنٹ سرونٹ کنڈکٹ رولز مجریہ 1964 کی شق 12 کے تحت  سال 30 جون تک ظاہر کرنا لازمی ہوتے ہیں لہٰذا عامر احمد علی ایک ماہ کے اندر 1999 سے لے کر 2019 تک کے ذرائع آمدن اور اثاثہ جات ظاہر کریں بصورت دیگر تادیبی کارروائی ہو گی۔ مراسلے میں کہا گیا کہ سروس رولز پروموشنز رولز مجریہ 2019 کی شق 7 کے تحت گریڈ 18 سے گریڈ 21 تک کے افسران کی اگلے گریڈ میں ترقی اثاثے ظاہر نہ کرنے کے باعث نہیں ہو گی، اس مراسلے کے نقل ملنے پر وزارت داخلہ نے بھی چیف کمشنر اسلام آباد کو فوری قواعد پر عملدرآمد کرنے کی ہدایت کی ہے۔ یاد رہے کہ حال ہی میں چیف کمشنر عامر احمد علی اور ڈپٹی کمشنر حمزہ شفقات کا نام مبینہ طور پر تھانہ کورال کے علاقے میں بڑے لینڈ مافیا کی سرپرستی میں سامنے آیا ہے،جس پر دونوں افسران نے الزام ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل عمر رندھاوا پر ڈال کر ان کے تبادلے کے احکامات جاری کروائے، تاہم حقائق کا علم ہونے پر وزارت داخلہ نے اس تبادلے پر عملدرآمد روک لیا اور معاملے کی تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ چیف کمشنر عامر احمد علی شریف برادران کے قریبی ساتھی سعید مہدی کے صاحبزادے ہیں جبکہ ڈی سی حمزہ شفقات بھی شریف برادران کے قریبی سابق ایس ایس پی چوہدری شفقات کے صاحبزادے ہیں۔

چیف کمشنر اسلام آباد

مزید :

صفحہ آخر -