چین کی ووہان لیب کا پاکستان میں 'خفیہ آپریشن' ،پاکستانی دفتر خارجہ کا ردعمل بھی آگیا

چین کی ووہان لیب کا پاکستان میں 'خفیہ آپریشن' ،پاکستانی دفتر خارجہ کا ردعمل ...
چین کی ووہان لیب کا پاکستان میں 'خفیہ آپریشن' ،پاکستانی دفتر خارجہ کا ردعمل بھی آگیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) چین کی ووہان لیب کے پاکستان میں 'خفیہ آپریشن' کے حوالے سے پاکستانی دفتر خارجہ کا ردعمل بھی آگیا۔

آسٹریلوی ی نیوز ادارے میں شائع ہونے والی خبر  میں الزام لگایا گیا کہ 'یہ خفیہ سہولت مبینہ طور پر اینتھراکس جیسے پیتھوجنز بنارہی ہے جسے بائیولوجیکل جنگ میں استعمال کیا جاسکتا ہے'۔

ڈان نیوز کے مطابق دفتر خارجہ نےکہاہے کہ23 جولائی کو شائع ہونے والی اس رپورٹ میں لگائے گئے الزامات بے بنیاد ہیں۔ترجمان دفتر خارجہ کی جانب سے جاری بیان کے مطابق 'اس (خبر)میں حقائق کو توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا ہے اور نامعلوم ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے جھوٹ بیان کیا گیا ہے'۔

وزارت خارجہ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا کہ 'پاکستان کی بائیو سیفٹی لیول 3 (بی ایس ایل 3) لیبارٹری کے حوالے سے کچھ بھی چھپا ہوا نہیں ہے، پاکستان اعتماد سازی کے اقدامات کے سلسلے میں بائیولوجیکل اور زہریلے ہتھیاروں کے کنونشن (بی ٹی ڈبلیو سی) کو اس سہولت کے بارے میں معلومات شیئر کر رہا ہے'۔

ان کا کہنا تھا کہ 'اس سہولت کا مقصد ریسرچ اینڈ ڈیولپمنٹ (آر اینڈ ڈی) کے ذریعہ ابھرتے ہوئے صحت کے خطرات، نگرانی اور بیماریوں سے پھیلنے والی تحقیقات سے متعلق تشخیصی اور حفاظتی نظام میں بہتری لانا ہے'۔

انہوں نے کہا کہ 'پاکستان اپنی بی ٹی ڈبلیو سی ذمہ داریوں کی سختی سے پابندی کرتا ہے اور رکن ریاستوں کے کنونشن پر مکمل تعمیل کو یقینی بنانے کے لیے ایک مضبوط تصدیق کے طریقہ کار اپناتے ہوئے سب سے مخیر حمایتی رہا ہے'۔

خیال رہےآسٹریلوی نیوز ادارے نے دعویٰ کیا تھا کہ 'چین کے ووہان انسٹی ٹیوٹ آف وائرولوجی نے 'ہندوستان اور مغربی حریفوں کے خلاف وسیع پیمانے پر کارروائی کے ایک حصے کے طور پر پاکستان میں آپریشنز قائم کیے'۔

مزید :

قومی -