تبدیلی کے سارے نعرے پٹ گئے،مافیاز الیکشن میں گھوڑے خریدتے اور پھر اُن پر سوار ہوکر۔۔۔۔سراج الحق نے عوام کی آنکھیں کھولنے کے لئےپریشان کن بات کہہ دی

تبدیلی کے سارے نعرے پٹ گئے،مافیاز الیکشن میں گھوڑے خریدتے اور پھر اُن پر ...
 تبدیلی کے سارے نعرے پٹ گئے،مافیاز الیکشن میں گھوڑے خریدتے اور پھر اُن پر سوار ہوکر۔۔۔۔سراج الحق نے عوام کی آنکھیں کھولنے کے لئےپریشان کن بات کہہ دی

  

وزیر آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)امیرجماعت اسلامی پاکستان کے سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ آج ہماری قسمت کے فیصلے ایسے مشیر کررہے ہیں جو خود کو کسی کے سامنے جواب دہ نہیں سمجھتے ،موجودہ حکومت سابقہ حکومتوں کا ہی تسلسل ہے،یہ لوگ پاکستان کی نظریاتی شناخت کو ختم کرنے پر تلے ہوئے ہیں،ملک پر کل بھی مافیاز کی حکومت تھی اور آج بھی اقتدار پر مافیاز کا قبضہ ہے،عوام مافیاز کے چنگل سے آزادی چاہتے ہیں تو جماعت اسلامی کی دیانتدار اور خدمت کرنے والی قیادت کا انتخاب کریں،جماعت اسلامی کے کارکنان اور رضا کاروں نے مصیبت کی ہر گھڑی میں عوام کی بے لوث خدمت کی ہے جس کا اعتراف قومی وبین الاقوامی ادارے اور میڈیا بھی کررہا ہے،مافیاز الیکشن میں گھوڑے خریدتے ہیں ، پھر ان پر سوار ہوکر ملک و قوم کو لوٹتے ہیں،مافیازکی سپورٹ سے مسلط ہونے والی حکومت ان کے ہاتھوں یرغمال ہوکر عوام کا استحصال کرتی ہے،مافیاز کے ہاتھوں کبھی چینی کبھی آتا اور کبھی پٹرول اور کبھی ادویات غائب ہوجاتی ہیں،حکومت نے احتساب کو مذاق بنا دیا ہے،جن کا اپنا دامن صاف نہ ہو وہ کسی کا کیا احتساب کریں گے،حقیقی احتساب صرف جماعت اسلامی کرسکتی ہے،ہم پہلے خود کو احتساب کیلئے پیش کرتے ہیں اور پھر دوسروں کے احتساب کا مطالبہ کرتے ہیں،جماعت اسلامی کی حکومت آئی تو کسی چور اچکے اور لٹیرے کو قومی خزانے کی طر ف آنکھ اٹھاکر دیکھنے کی بھی جرات نہیں ہوگی، تبدیلی کے سارے نعرے پٹ گئے ہیں ،عوام کے دکھوں کا مداوہ نہیں ہوسکا۔عوام کے دکھوں کا مداوہ اور تمام ملکی مسائل کا حل صرف نظام مصطفی ﷺ کے نفاذ میں ہے ۔ جماعت اسلامی 4 اگست کو اسلام آباد میں قومی کشمیر کانفرنس کرے گی اور 5 اگست کو ملک بھر میں یوم سیاہ اور یوم احتجاج منائے گی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے وزیر آباد میں اجتماع کارکنان سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اجتماع سے وسطی پنجاب کے امیر جاوید قصوری ،مشتاق احمد بٹ اور چوہدری ناصر محمود کلیرنے بھی خطاب کیاجبکہ اس موقع پر سیکریٹری اطلاعات قیصر شریف،صوبائی جنرل سیکریٹری بلال قدرت بٹ ،نصراللہ گورائیہ و دیگر بھی موجود تھے۔ جماعت اسلامی نے چوہدری ناصر محمود کلیر کو پی پی 51کے ضمنی الیکشن میں اپنا امیدوار نامزد کردیا ہے جس کا باقاعدہ اعلان امیر جماعت اسلامی سینیٹر سرا ج الحق نے کارکنان کے اجتماع میں کیا ۔ 

 سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ حکومت کی نااہلی کی وجہ سے معیشت ڈوب چکی ہے،ترقی کا پہیہ الٹا گھوم رہا ہے،جی ڈی پی کی شرح کم ترین سطح پر ہے،برآمدات کم اوردرآمدات بڑھ رہی ہیں اور بیرونی سرمایہ کاری میں مسلسل کمی آرہی ہے،حکومت کی معاشی پالیسیوں کی وجہ سے مہنگائی اور بے روزگاری کا طوفان آگیاہے اور عوام پی ٹی آئی کی طرف سے دلائی گئی امیدوں سے دو سال ہی میں مکمل طور پر مایوس ہوچکی ہے،وزیراعظم اپنی پارٹی کے بنیادی نعرہ احتساب اور کرپشن اور اقرباپروری کے خاتمہ پر بھی عملدرآمد کروانے میں ناکام رہے ہیں،اب تو عوام بھی کہنا شروع ہوگئے ہیں کہ حکومت کچھ نہیں کرسکی۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ کوئی ایک فرد ناکام نہیں تینوں پارٹیاں ناکام ہوئی ہیں،اب یہاں مغربی کلچر کو تحفظ دینے والوں کا نظام نہیں چلے گا،جماعت اسلامی میدان میں کھڑی ہے ۔ہم مہنگائی کے خلاف بے روزگار نوجوانوں ،مزدور وںاور کسانوں کومتحد کریں گے اوران کےلئے موثر آواز بنیں گے،ایک کروڑ نوکریاں دینے کا وعدہ کرنے والوں نے لاکھوں لوگوں سے روز گار چھین لیا ہے،اعلیٰ تعلیم یافتہ نوجوان اپنے خاندانو ں کا سہارا بننے کی بجائے مایوسی کا شکار ہیں اور اپنے مستقبل کے حوالے سے پریشان ہیں،سارا دن خون پسینہ ایک کرنے کے باجود مزدور اور کسان کے بچے بھوکے سوتے ہیں،مزدور وں کا سرمایہ دار اور کسانوں کا جاگیردار استحصال کررہے ہیں،ہمارا عزم ہے ملک کے اندر جماعت اسلامی کے علاوہ باصلاحیت لوگوں کو قومی ایجنڈے پراکٹھا کریں گے ۔

انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی بلدیاتی الیکشن اورآئندہ ہونے والے ہر الیکشن میں حصہ لے گی،آئندہ الیکشن سے قبل شفاف الیکشن کےلئے اصلاحات ناگزیر ہیں،ہم کسی کو دولت کے بل بوتے پر انتخابات چوری نہیں کرنے دیں گے،میڈیا آئینہ ہے اسے توڑنے کے بجائے حکمران اپنے چہرے پر لگے داغ صاف کریں۔

مزید :

قومی -