وفاقی وزیرمذہبی امور نور الحق قادری نےملکی مسائل کےحل کا ایسا فارمولہ پیش کردیا کہ لبرل قوتیں آگ بگولہ ہو جائیں گی

وفاقی وزیرمذہبی امور نور الحق قادری نےملکی مسائل کےحل کا ایسا فارمولہ پیش ...
وفاقی وزیرمذہبی امور نور الحق قادری نےملکی مسائل کےحل کا ایسا فارمولہ پیش کردیا کہ لبرل قوتیں آگ بگولہ ہو جائیں گی

  

پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر برائے مذہبی امور پیر ڈاکٹر نور الحق قادری نے کہا کہ علماء اور حکمران اگر صلح کی کوشش کریں تو سب کچھ ٹھیک ہو سکتا ہے جبکہ علماء کیلئے پالیسیاں بنائی جائے تو بہتر نتائج ہوسکتے ہیں،علماء سے مشاورت لینے سے مسائل حل ہو جائیں گے،علما ئے کرام نے کورونا وباء کے دنوں میں ایس او پیز پر عمل درآمد کر کے اپنا کردار ادا کیا جبکہ عید کے دنوں میں بھی ایس او پیز کا خاص خیال رکھے۔

پشاور پریس کلب میں اتحاد امت کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیربرائے مذہبی امورپیر ڈاکٹرنورالحق قادری نے کہا کہ حکومت اور علماء کے درمیان ایک رابطہ قائم رہنا چاہئے،چالیس سال اس ملک کو تباہ کرنے کی کوشش کی گئی، لسانیت اور قومیتوں کے نام پر قومیتوں کو آپس میں لڑانے کی کوششیں کی گئی جبکہ ملک قائم ہے اور تا قیامت قائم رہے گا،علماء کرام سے گزارش ہے عید کے دنوں میں ایس او پیز کا خصوصی خیال رکھیں۔ نور الحق قادری نے کہا کہ روز اول سے وزیر اعظم عمران نے جو پالیسی دی ہے وہ واضح ہے، پاکستان دنیا کا واحد ملک ہے جہاں مسجدیں بند نہیں ہوئیں، 90 کی دہائی میں علما کرام نے فرقہ واریت کو مشترکہ کوششوں کے ذریعے ناکام بنایا،علماکرام فرقہ واریت سے مکمل اجتناب کا اظہار کریں۔

مزید :

علاقائی -خیبرپختون خواہ -پشاور -