سی ٹی ڈی نے ایک ہفتہ کی کارکردگی رپورٹ جاری کردی

سی ٹی ڈی نے ایک ہفتہ کی کارکردگی رپورٹ جاری کردی
سی ٹی ڈی نے ایک ہفتہ کی کارکردگی رپورٹ جاری کردی

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن)محکمہ انسداد دہشت  گردی (سی ٹی ڈی )نے گزشتہ ایک ہفتے کے دوران دہشت گردی کی کارروائیوں میں ملوث 13 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا جبکہ مجموعی طور پر 59 افراد کو چیک کیا گیا۔ سی ٹی ڈی کے ساتھ مقابلے میں دو دہشت گرد ہلاک بھی ہوئے۔

 ترجمان سی ٹی ڈی کے مطابق پولیس عہدیداروں کی ٹارگٹ کلنگ پر ملک بھر میں دہشت گردی کی حالیہ لہر کو مدنظر رکھتے ہوئے سی ٹی ڈی پنجاب نے کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے بچنے کے لئے پورے پنجاب میں وسیع پیمانے پر انٹیلیجنس بیس آپریشنز کا انعقاد کیا ہے۔  گزشتہ 7 دنوں میں سی ٹی ڈی پنجاب نے پنجاب کے مختلف اضلاع میں 54 آئی بی اوز کا انعقاد کیا۔جس میں ان آئی بی اوز کے دوران 59 مشتبہ افراد سے پوچھ گچھ کی گئی ہے لادی گینگ کے 02 کارکن ہلاک اور 13 مشتبہ افراد کو گرفتار کیا گیا ہے۔ ذرائع کے بارے میں معلومات پر ایک آئی بی اوز کا اہتمام کیا گیا۔ایک آپریشن کے دوران لڈا گینگ کے 2 سرگرم کارکنوں بخش بخش  اور محمد اسماعیل مارے گئے۔ گرفتار ملزمان میں محمد عمرچنیوٹ سے گرفتار ہوا۔  محمد ندیم گجرات سے گرفتار ہوا۔ملزم کا تعلق ٹی ایل پی سے تھا۔نصیرالدین جیلانی،حافظ طاہر محمود، انصر شاہ بہاولپور سے گرفتار ہوئے۔ صاحبزادہ سلطان محمود قادری گجرات سے گرفتار ہوا۔عبد اللطیف گکھڑ کو راولپنڈی سے گرفتار کیا گیا۔سید محمد شاہد حسین کو نارووال سے گرفتار کیا گیا۔ ٹی ایل پی کارکن حافظ ظہور احمد س / منظور احمد،محمد کو سیالکوٹ سے گرفتار کیا گیا۔ ترجمان سی ٹی ڈی کا کہنا تھا کہ سی ٹی ڈی پنجاب تیزی سے اپنے محفوظ اور محفوظ پنجاب کے ہدف کو بروئے کار لا رہا ہے اور دہشت گردوں اور ریاست مخالف عناصر کو سلاخوں کے پیچھے لانے کی کوششوں میں کوئی کسر نہیں چھوڑے گا۔

مزید :

قومی -