عالمی سطح پر 2014ئ میں براہ راست بیرونی سرمایہ کاری میں کمی ہوئی ،اقوام متحدہ

عالمی سطح پر 2014ئ میں براہ راست بیرونی سرمایہ کاری میں کمی ہوئی ،اقوام متحدہ

 اقوام متحدہ (اے پی پی) اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ 2014 ء کے دوران عالمی سطح پر براہ راست بیرونی سرمایہ کاری کی شرح میں کمی واقع ہوئی تاہم ترقی پذیر ملکوں کیلئے اس کی شرح تاریخ کی بلند ترین سطح پر رہی۔ورلڈ انویسٹمنٹ رپورٹ کے 2015 ء کے جاری کردہ ایڈیشن کے مطابق 2014 ء میں عالمی سطح پر بیرونی سرمایہ کاری کی شرح 16 فیصد کم ہوکر 1.23 ٹریلین ڈالر رہی جبکہ ترقی یافتہ ملکوں کی جانب اس کا بہاؤ 28 فیصد کمی کے ساتھ 499 ارب ڈالر تھا۔یواین کانفرنس آن ٹریڈ کی جاری کردہ اس رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ براہ راست سرمایہ کاری کی یہ مایوس کن ہوتی صورتحال کمزور عالمی معیشت، سرمایہ کاری کیلئے غیر یقینی پالیسی اور علاقائی سیاست کے کہیں زیادہ خدشات ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ اس دورانیے میں ترقی پذیر ملکوں کی جانب براہ راست بیرونی سرمایہ کاری 2 فیصد بڑھ کر 681 ارب ڈالر رہی جو کہ تاریخ کی بلند ترین سطح ہے۔جن 10 اہم ترقی پذیر ملکوں میں بیرونی سرمایہ کاری کی شرح زیادہ رہی ان میں چین کا نمبر سب سے پہلا ہے۔ادارے کا کہنا ہے کہ 2015 ء کے دوران براہ راست بیرونی سرمایہ کاری 11 فیصد بڑھ کر 1.4 ٹریلین ڈالر، 2016 ء میں 1.5 ٹریلین ڈالر جبکہ 2017 ء میں 1.7 ٹریلین ڈالر ہونے کا امکان ہے۔

مزید : کامرس