حکومت کی گندم خریداری سکیم ناکام ۔چھوٹے کاشتکار ذلیل و خوارہو گئے،ملک محمد رمضان

حکومت کی گندم خریداری سکیم ناکام ۔چھوٹے کاشتکار ذلیل و خوارہو گئے،ملک محمد ...

  

لاہور(آن لائن) کسان بورڈپاکستان کے سیکرٹری جنرل ملک محمد رمضان روہاڑی نے پنجاب بھر کے گندم خریداری سینٹروں سے آ مدہ اطلاعات کے بعد اپنے دفتر میں میڈیاکے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا حکومت کی گندم خریداری سکیم بالکل فلاپ ہو چکی ہے چھوٹے کاشتکاروں کو بار دانہ نہیں دیا جا رہا جبکہ سینٹروں پر با اثر ذمینداروں اور آ ڑھتیوں کو وی آ ئی پی پروٹوکول دیا جا رہا ہے ۔عام کسانوں کے ساتھ بھکاریوں جیسا سلوک بھی نہیں کیا جا رہا پورے پنجاب میں بار دانہ کی تقسیم میں رشوت کا بازار گرم ہے سینٹروں پر موجود عملہ پچاس سے لے کر سو روپے فی بوری رشوت لے کر بار دانہ تقسیم کر رہا ہے خریداری کے وقت تول میں ہیرا پھیری کی شکایات عام ہیں ایک بوری پر دو سے تین کلو تک گندم کی کٹوتی کر کے کاشتکاروں کے ساتھ ظلم کیا جا رہا ہے ۔جب لو گ مقامی عملہ کی شکایت کے لئے اعلیٰ افسران سے شکائت کرتے ہیں تو انکے فون بند ملتے ہیں ضلعی انتظامیہ اور محکمہ فوڈ کے افسران ملی بھگت سے لاکھوں روپے کی دیہاڑیاں لگا رہے ہیں ۔ گندم کی خریداری کے لئے رکھے گئے ایک سو تیس ارب روپے کا کسانوں کو کچھ فائدہ نہیں پہنچے گا بلکہ ان میں سے کچھ رقم کرپٹ افسران کھا جائیں گے اور باقی حکمران طبقہ کے چہیتے آڑھتی اور با اثر زمیندر ہڑپ کر جائیں گے انہوں نے کہا کہ اس سال گندم خریداری مہم میں کرپشن کی انتہا ہو گئی ہے اور لوٹ مار کے سابقہ کئی ریکارڈ ٹوٹ چکے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ گندم خریداری مہم کے میگا کرپشن کیس کا نیب نوٹس لے اور لوٹ مار کرنے والوں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے اور عام کاشتاروں کو بار دانہ کی تقسیم یقینی بنائی جائے انہوں نے سراپا احتجاج گندم کے کاشتکاروں کو یقینی بنایا کہ کسان بورڈ پاکستان انکے حقوق کے لئے ہر سطح پر آ واز بلند کرے گا ۔

مزید :

کامرس -