جنوبی سوڈان کا یوم آزادی امسال بھی کی تقریبات نہ منانے کا اعلان

جنوبی سوڈان کا یوم آزادی امسال بھی کی تقریبات نہ منانے کا اعلان

  

جوبا(آن لائن)جنوبی سوڈان ،جو خانہ جنگی کا شکار دنیا کا کم عمر ترین ملک ہے ،نے مسلسل دوسرے سال کیلئے یوم آزادی کی سرکاری سطح پر تقریبات منسوخ کردی ہیں ۔سرکاری ترجمان نے منسوخی کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ ہم آزادی کی تقریبات نہیں منارہے ہیں کیونکہ ہمارے حالات اس وقت ہمیں اس کی اجازت نہیں دیتے جب لوگوں کو ان فنڈز کی ضرورت ہے ۔

جنوبی سوڈان 9جولائی 2011کو سوڈان سے علیحدہ ہوا تھا تاہم 2013ء کے بعد سے خانہ جنگی کی لپیٹ میں ہے ۔تشدد اور غذائی قلت کے باعث ہزاروں افراد ہلا ک ہوچکے ہیں اور 3.7ملین افراد کو اپنا گھر بار چھوڑنا پڑا ہے ۔تیل پر انحصار کرنے والی ملک کی معیشت دیوالیہ ہونے کے دھانے پر ہے ،رواں سال افراط زر 800فیصد سے زائد تک پہنچ چکی ہے ۔گزشتہ سال بھی یوم آزادی کی تقریبات منسوخ کردی گئی تھیں کیونکہ جوبا میں صدر سلوا کیر اور سابق نائب رئیک مشار کی حامی فورسز کے درمیان پرتشدد جھڑپیں شروع ہو گئی تھیں۔

مزید :

عالمی منظر -