گجرات:ضلع کونسل گجرات کا اجلاس اپوزیشن کے احتجاج کی نذر ہو گیا

گجرات:ضلع کونسل گجرات کا اجلاس اپوزیشن کے احتجاج کی نذر ہو گیا

  

گجرات(بیورورپورٹ) ضلع کونسل گجرات کا اجلاس اپوزیشن کے احتجاج کی نذر ہو گیا۔ وائس چیئرمین شعیب رضا کی زیر صدارت ہونیوالے اجلاس میں اپوزیشن لیڈر چوہدری غلام رسول شارق ایڈووکیٹ نے وائس چیئرمین شعیب رضا کی دوہری شہریت پر سوال اٹھاتے ہوئے کہا کہ وہ الیکشن لڑنے کے اہل نہیں اور نہ ہی قانونی طور پر کسی اجلاس کی صدارت کر سکتے ہیں جب تک ان کی دوہری شہریت کا فیصلہ نہ ہو جائے وہ کسی اجلاس کی صدارت نہیں کر سکتے۔ ہم اس ہاؤس کے سینئر اور تجربہ کار ممبران ہیں آج تک اپوزیشن کی اتنی بے توقیری نہیں دیکھی سابقہ ادوار میں اپوزیشن کو انکا پورا حق ملتا تھا مگر آج نہ تو بولنے دیا جارہا ہے اور نہ کوئی فنڈ مل رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یک طرفہ طور پرہا ؤ س کو چلانے والے یاد رکھیں ایک دن انکو بھی جانا ہے چےئرمینوں کو ایجنڈا اور اجلاس کی کاروائی بروقت ارسال نہیں کی جاتی۔ اگر یہ سلسلہ جاری رہا تھا ایک دن آئیگا یہاں کوئی بھی نہیں حاضر ہوگا ۔انہوں نے کہا کہ ہم تو حکومتی جماعت کے ساتھ تعاون کرنا چاہتے ہیں مگر وہ ہر دفعہ کی گئی بات سے منحرف ہوجاتے ہیں کسی کی بات اور وعدے پر یقین کریں۔ ضلع چےئرمین نے وعدہ کیا تھا کہ فنڈز دینگے وہ اپنی بات سے منحرف ہو گئے ہیں اپوزیشن اراکین نے واک آؤٹ بھی کیا اس موقع پر عدیل وڑائچ نے کہا کہ سپیکر کے خلاف عدالت میں کیس ہے لہٰذا وہ سٹیپ ڈاؤن کریں اجلا س کی کاروائی کسی اور کو کرنے دیں جس پر انہوں نے انکار کیا اور کہا میری اہلیت کو چیلنج نہیں کیا گیا غلام رسول شارق نے کہا کہ اپکی موجودگی میں جو بھی کاروائی ہوگی وہ غیر قانونی اور غیر آئینی ہوگئی لہٰذا آپ سپیکر شپ سے ہٹ جائیں حکومتی رکن ڈاکٹر عباس گلیانہ اور ملک اشفاق نے کہا اس معاملہ کو نہ چھیڑا جائے اجلا س کی کاروائی چلنے دی جائے اجلاس میں مختلف قراردادیں پیش کی گئی جن پر متعلقہ محکموں کو چھٹیاں لکھنے کی ہدایت کی گئی ۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -