مسجد الحرام پر حملے کا ناپاک منصوبہ بیرون ملک بنایا گیا: سعودی وزارت داخلہ

مسجد الحرام پر حملے کا ناپاک منصوبہ بیرون ملک بنایا گیا: سعودی وزارت داخلہ

  

جدہ (مانیٹرنگ ڈیسک ) سعودی وزارت داخلہ نے کہا ہے مسجد الحرام پر حملے کا ناپاک منصوبہ بیرون ملک بنا ، ایسے منصوبے بیرون ملک سے بنائے جا رہے ہیں جن کا مقصد سعودی عرب کی سکیورٹی اور سلامتی کو عدم استحکام سے دوچار کرنا ہے۔ اللہ تعالیٰ اور عوام کی مدد سے ایسے مجر ما نہ نوعیت کے منصوبے ناکام بنائیں گے اور ملوث افراد کو گرفتار کرینگے۔وزارت داخلہ نے ملوث گروپ کی شناخت ظاہر نہیں کی ، مسجد الحرام کے نواحی علاقے اجیاد کالونی میں خودکش دھماکے میں زخمی ہونیوالے چھ افراد غیر ملکی زائرین تھے جن میں سے 4 کو ہسپتال سے فارغ کر دیا گیا جبکہ دو شدید زخمی ہیں اور زیر علاج ہیں۔ واقعہ کے بعد حرم شریف کے نواحی علاقوں میں سکیورٹی بڑھا دی گئی۔ سعودی میڈیا کا کہنا ہے دہشتگرد جمعتہ الوداع پر مسجد الحرام کو نشانہ بنانا چاہتے تھے۔سعودی فورسز نے جمعہ کو علی الصبح کارروائی کرکے حملے کا ناپاک منصوبہ ناکام بنا د یا تھا، خود کش بمبار نے حملے کیلئے اجیاد کالونی کو چنا تھا کیونکہ یہ حرم کے نواح میں واقع ہے جو حرم مکی حرم مکی سے صرف 8 سو میٹر دور ہے ۔ اجیاد کالونی میں سال کے ان دنوں میں بہت زیادہ رش ہوتا ہے کیونکہ حرم کے قریب ہونے کی وجہ سے یہ معتمرین اور حجاج کی من پسند جگہ سمجھی جاتی ہے۔ یہاں بہت سے ہوٹل بھی ہیں جہاں زائرین قیام کرتے ہیں۔ ادھر متحدہ عرب امارات اور ایران نے حملے کے منصوبے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے ۔

مزید :

صفحہ آخر -