وائٹ ہاؤس میں افطار پارٹی نہ عید ملن تقریب کا اہتمام ، امریکی صدر ٹرمپ نے 20 سالہ پرانی امریکی روایت توڑ دی

وائٹ ہاؤس میں افطار پارٹی نہ عید ملن تقریب کا اہتمام ، امریکی صدر ٹرمپ نے 20 ...
 وائٹ ہاؤس میں افطار پارٹی نہ عید ملن تقریب کا اہتمام ، امریکی صدر ٹرمپ نے 20 سالہ پرانی امریکی روایت توڑ دی

  

نیو یارک (ڈیلی پاکستان آن لائن) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے صدر بنتے  ساتھ ہی 20 سالہ پرانی امریکی روایات توڑ دیں ،اول روز سے اسلام اور مسلمانوں کے خلاف نفرت انگیز بیانات داغنے والے  امریکی صدر  ڈونلڈ ٹرمپ نے اسلام مخالفت میں وائٹ ہاؤس میں مسلم کمیونٹی کے لئے  افطار پارٹی دی نا ہی عید ملن تقریب  کا اہتمام کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ  کی اسلام اور مسلمانوں سے  مخالفت  اور اندرونی نفرت کھل کر سامنے آگئی، ڈونلڈ ٹرمپ نے صدر بنتے ساتھ ہی 20 سالہ پرانی امریکی روایات توڑ دیں، 2 دہائیوں میں پہلی بار وائٹ ہاؤس میں مسلم کمیونٹی کے لئے افطار پارٹی دی گئی  اور نہ ہی  عید ملن تقریب کا اہتمام  کیا گیا جو اس سے قبل گذشتہ 20 سالوں میں برسرا قتدار رہنے والے تمام امریکی صدور بڑی باقاعدگی کے ساتھ ہر سال مسلمانوں کے اعزاز مٰیں ان تقریبات کا انعقاد کرتے تھے ۔رواں برس امریکی وزارت خارجہ کی جانب سے عید ملن کا کوئی اعلان نہیں کیا گیااور  نہ ہی صحافیوں کو دعوت دی گئی۔ وائٹ ہاؤس میں افطار پارٹی کا آغاز صدر بل کلنٹن نے سنہ 1996 میں کیا تھا جسے جارج ڈبلیو بش اور براک اوباما نے بھی برقرار رکھا۔صدر ٹرمپ اپنی انتخابی مہم کے آغاز سے ہی اسلام کے بارے میں بہت سخت رویہ اپنائے ہوئے ہیں۔

مزید :

بین الاقوامی -