محترمہ بینظیر بھٹوشہید کی 66 ویں سالگرہ پاکستان پیپلز پارٹی سعودی عرب جدہ کے زیر اہتمام منائی گئی

محترمہ بینظیر بھٹوشہید کی 66 ویں سالگرہ پاکستان پیپلز پارٹی سعودی عرب جدہ کے ...
محترمہ بینظیر بھٹوشہید کی 66 ویں سالگرہ پاکستان پیپلز پارٹی سعودی عرب جدہ کے زیر اہتمام منائی گئی

  


جدہ (بیورو رپورٹ) سابق وزیراعظم پاکستان محترمہ بینظیر بھٹوشہید کی 66 ویں سالگرہ پاکستان پیپلز پارٹی سعودی عرب جدہ کے زیر اہتمام جئیے بھٹو کے نعروں کی گونج میں انتہائی جوش و خروش اور جذبہ سے منائی گئی۔ تقریب کی صدارت کرتے ہوئے پیپلز پارٹی سعودی عرب کے صدر تصور حسین چودھری نے بینظیر بھٹو کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ محترمہ پہلی مرتبہ 1988 میں اور دوسری مرتبہ 1993 میں پاکستان کی وزیراعظم منتخب ہوئی تھیں۔وہ 21 جون 1953 میں سندھ کے مشہور سیاسی گھرانے میں پیدا ہوئیں۔ محترمہ سابق وزیراعظم پاکستان ذوالفقار علی بھٹو کی بڑی صاحبزادی تھیں ۔وہ اپریل 1979ء کواپنے والد ذوالفقار علی بھٹو کی وفات کے بعد 29 برس کی عمر میں پاکستان پیپلز پارٹی کی قیادت سنبھالی۔

تقریب کے مہمان خصوصی ممتاز صحافی اور پارٹی کے مرکزی رہنما اسد اکرم نے کہا کہ بے نظیر بھٹو نے دو دسمبر1988ء میں 35 سال کی عمر میں ملک اور اسلامی دنیا کی پہلی خاتون وزیرِاعظم کے طور پر حلف اٹھایا۔ لیکن بے نظیر بھٹو کی حکومت کے خلاف سازشیں جاری رکھی گئیں اور حکومت کو مدت پوری کرنے سے پہلے ہی انکی حکومت ختم کر دی گئی۔ محترمہ کو پاکستان اور عالم اسلام کی دو دفعہ خاتون وزیر اعظم بننے کا اعزاز حاصل ہے۔ وہ  27دسمبر 2007ء کو راولپنڈی کے تاریخی مقام لیاقت باغ میں ایک انتخابی جلسہ سے خطاب میں انہوں نے ملک دشمنوں کو خبر دار کرتے ہوئے للکارا کہ وہ پاکستان دشمن قوتوں کے عزائم ناکام بنانے ملک واپس آئی ہیں اور ہر جگہ ہم پاکستان کا پرچم سر بلند رکھیں گے اور ملک دشمنوں کے گماشتوں کو ملک سے بھگا کر ہی سانس لینگے مگر انہیں اس وقت شہید کر دیا گیا جب وہ جلسہ ختم ہونے کے بعد واپس جارہی تھیں۔ مگر انکا مشن جاری ہے۔ اسد اکرم نے کہا کہ  بینظیر بھٹو ذوالفقار علی بھٹو کی صرف بیٹی ہی نہیں بلکہ بہترین سیاسی شاگرد بھی تھیں۔ انہوں نے اپنے والد سے جو کچھ سیکھا تھا، عملی سیاست میں اس پر مکمل عمل بھی کیا۔ 

 اے این پی کے مرکزی رہنما نوشیرواں خٹک نے کہا کہ محترمہ بینظیر بھٹو ایک نڈر ، بہادر اور محب وطن لیڈر تھیں ایسے لیڈر صدیوں میں پیدا ہوتے ہیں۔ دیگر مقرین جنہوں نے محترمہ کی جدو جہد اور سیاسی بصیرت کو خراج تحسین پیش کیا ان مین  پی وائی او کے سینئر نائب صدر راجہ صدام، چودھری اکرام اللہ کوہلی، علی اصغر، پی وائی او کے سینئر نائب صدر گلف خالد گجر، سید فضل عباس شاہ ،پی پی پی سعودی عرب کے نائب صدر ملک جاوید حسین ، پی پی پی جدہ کے صدر راجہ اعجازحسین جنجوء، سکریٹری خلیل احمد عبدالعزیز شامل تھے ۔ سکریٹری اطلاعات و معروف شاعر زمرد خاں سیفی نے منظوم خراج تحسین پیش کیا۔ ننھے قاری خلیل احمد کی تلاوت سے تقریب کا آغازہوا۔ نظامت کے فرائض پی پی پی سعودی عرب کے ڈپٹی سکرٹری جنرل اور معروف شاعر آفتاب ترابی نے سر انجام دیے۔ 

تقریب میں پارٹی  کے رہنمائوں اور کارکنوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔آخر میں سالگرہ کا کیک جئیے بھٹو کے نعروں کی گونج میں کاٹا گیا۔

مزید : عرب دنیا