بلوچستان کے مسائل حل کرنے کیلئے کمیٹی قائم، رپورٹ آنے کے بعد حکومت کے ساتھ چلنے یا نہ چلنے کا فیصلہ کریں گے: اختر مینگل

بلوچستان کے مسائل حل کرنے کیلئے کمیٹی قائم، رپورٹ آنے کے بعد حکومت کے ساتھ ...
بلوچستان کے مسائل حل کرنے کیلئے کمیٹی قائم، رپورٹ آنے کے بعد حکومت کے ساتھ چلنے یا نہ چلنے کا فیصلہ کریں گے: اختر مینگل

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )بلوچستان کے مسائل کے حل کیلئے خصوصی کمیٹی قائم کر دی گئی ہے جو 2 ماہ بعد اپنی رپورٹ پیش کرے گی۔ سردار اختر مینگل کا کہنا ہے کہ پارلیمانی کمیٹی کی رپورٹ آنے کے بعد حکومت کے ساتھ چلنے یا نہ چلنے کا فیصلہ کریں گے۔

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علی محمد خان کی جانب سے قومی اسمبلی میں پیش کی گئی قرار داد متفقہ طور پر منظور کرتے ہوئے سپیکر کی زیر صدارت بلوچستان کے مسائل کے حل کیلئے خصوصی کمیٹی قائم کر دی گئی۔ جس میں تمام پارلیمانی پارٹی کے اراکین شامل ہونگے۔اسپیکر پارلیمانی پارٹی کے ممبران کا انتخاب کریں گے۔کمیٹی کی رپورٹ کا 2 ماہ بعد جائز لیا جائے گا۔

بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل ) کے سربراہ سردار اختر مینگل نے کمیٹی کے قیام پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ بلوچستان کا معاملہ اتنا پیچیدہ نہیں جتنا بنا دیا گیا ہے۔ بلوچستان کے مسائل کے حل کیلئے 6 نکات وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات میں ان کے سامنے رکھے ہیں انہوں نے تمام نکات پر عملدر آمد کی یقین دہائی کروا ئی ہے بلوچستان کے مسائل سے متعلق کمیٹی کا قیام خوش آئند ہے۔ہم دن رات بیٹھنے کیلئے تیار ہیں۔ہم بلوچستان کے مسائل کا جمہوری انداز میں حل چاہتے ہیں۔کمیٹی کی پہلی رپورٹ کا 2 ماہ بعد جائزہ لے کر حکومت کے ساتھ چلنے یا نہ چلنے کا فیصلہ کریں گے۔

مزید : قومی