بجٹ، کورونا کی صورتحال، پیپلز پارٹی کا اپوزیشن جماعتوں سے رابطے تیز کرنے کا فیصلہ

بجٹ، کورونا کی صورتحال، پیپلز پارٹی کا اپوزیشن جماعتوں سے رابطے تیز کرنے کا ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) پاکستان پیپلز پارٹی نے بجٹ اور کرونا کی صورتحال پر اپوزیشن جماعتوں سے رابطے تیز کرنے کا فیصلہ کر لیا بلاول بھٹو کی ہدایت پر پیپلز پارٹی رہنماؤں نے آل پارٹیز کانفرنس بلانے کے لئے اپوزیشن جماعتوں سے رابطے شروع کر دیئے،پیپلز پارٹی کی جانب سے چھ رکنی اے پی سی کمیٹی نے اپوزیشن جماعتوں سے رابطے شروع کر دیئے رابطے کرنے والی چھ رکنی کمیٹی میں نیر بخاری، راجہ پرویز اشرف اور شیری رحمان شامل ہیں رضا ربانی، فرحت اللہ بابر اور نوید قمر بھی رابطہ کمیٹی میں شامل ہیں نیر بخاری نے مولانا فضل الرحمان اور اکرم درانی سے ٹیلیفونک رابطہ کیا پیپلز پارٹی رہنما نے مولانا کے ساتھ سیاسی صورتحال، کرونا، اور بجٹ پر تبادلہ خیال کیانیر بخاری اور مولانا کے درمیان اے پی سی بلانے پر بھی مشاورت کی گئی کرونا کے حوالے سے حکومت نے مجرمانہ غفلت کا مظاہرہ کیا ہے۔بجٹ میں کرونا کے پیش نظر کوئی اقدامات نہیں ہیں سیاسی جماعتوں سے رابطے کر رہے ہیں، جلد اے پی سی بلائیں گے۔ذرائع کے مطابق اپوزیشن جماعتوں نے متفقہ حکمت عملی تیار کرنے کے لئے رابطے تیز کردیئے ہیں اس بارے میں پاکستان پیپلزپارٹی اور مولانا فضل الرحمان کے درمیان اہم رابطہ ہوا ہے یہ رابطے سردار اختر مینگل کی حکومت سے علیحدگی کے بعد تیزی آئی ہے۔ پی پی کے رہنما نئیر بخاری اور مولانا فضل الرحمن کے درمیان سردار اختر مینگل کی حکومت سے ناراضگی کے بعد کی صورتحال پر گفتگو کی گئی ذرائع کے مطابق پیپلزپارٹی اور مولانا فضل الرحمان نے تمام اپوزیشن جماعتوں کو اکٹھا کرنے پر اتفاق بھی کیا ہے اور کہاموجودہ حالات میں تمام اپوزیشن جماعتوں کو اکٹھا ہونا لازم ہے،تمام اپوزیشن جماعتوں کو اکٹھا کرنے اور متفقہ حکمت عملی کے لئے اے پی سی بلانے پر بھی گفتگو کی گئی۔

پیپلز پارٹی

مزید :

صفحہ اول -