ہم تبدیلی کے لئے آئے ہیں، کرسی جاتی ہے تو جائے، اصولوں پر سودے باز ی نہیں کرینگے: شاہ محمود قریشی

ہم تبدیلی کے لئے آئے ہیں، کرسی جاتی ہے تو جائے، اصولوں پر سودے باز ی نہیں ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر،آئی این پی)وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ کرسی جاتی ہے تو جائے، اصولوں پر سودا نہیں کریں گے،کرسی کی کوئی اہمیت نہیں ہے،ہمارے نظریئے کی اہمیت ہے، ہم تبدیلی کے لیئے آئے ہیں،پی ٹی آئی اراکین اسمبلی کی شکایات کا ازالہ کیا جائے گا،پی ٹی آئی کا ایک بھی رکن اسمبلی ادھر ادھرنہیں ہو گا،تمام اراکین اسمبلی وزیر اعظم کی قیادت میں متحد ہیں۔جمعرات کو پارلیمنٹ ہاؤس میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمودقریشی نے کہا کہ وزیر اعظم نے واضح پیغام دیا ہے ان کی کسی سے ذاتی مخالفت نہیں ہے،آج وزیراعظم نے بتا دیا کرسی کی کوئی اہمیت نہیں، شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کرسی کی کوئی اہمیت نہیں ہے،ہمارے نظریئے کی اہمیت ہے، ہم تبدیلی کے لیئے آئے ہیں کرسی جاتی ہے تو جائے، اصولوں پر سودا نہیں کریں گے، انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی اراکین اسمبلی کی شکایات کا ازالہ کیا جائے گا،پی ٹی آئی کا ایک بھی رکن اسمبلی ادھر ادھرنہیں ہو گا،تمام اراکین اسمبلی وزیر اعظم کی قیادت میں متحد ہیں،وزیر اعظم عمران خان نے ایوان میں تمام ملکی امور پرمفصل گفتگو کی،وزیر اعظم نے قوم کو بتایا کہ معاشی طور پر ورثہ میں کیا ملا،وزیراعظم عمران خان نے قوم کو آج مستقبل کا روڈمیپ دیا ہے،وزیر اعظم نے بتایا احستاب کا عمل کتنا ضروری ہے اور کیسے نافذ کرنا ہے،آج کی تقریر سے پی ٹی آئی کارکنان کا نظریہ ایک بار پھر سے تازہ ہو گیا،شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ہم نے منافقت کی بجائے دنیا کو امن کے لیئے قائل کیا جنگ کا حصہ نہں بنے،ہم مسلم امہ کے اندر تقسیم کو ختم کر کے جوڑنے کی کوشش کر رہے ہیں،مقبوضہ کشمیر کی عوامی لہر کا بھارت مقابلہ نہیں کر پائے گا۔اس موقع پر صحافی نے وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے اسامہ بن لادن کو شہید کہنے سے متعلق سوال کیا جس پر شاہ محمود قریشی نے کہا کہ اتنی بڑی تقریر پر یہ کوئی بحث کی بات ہی نہیں ہے۔دریں اثنا وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ کرونا وبا کے بعد تیزی سے بدلتی دنیا کے تقاضوں کو سامنے رکھتے ہوئے ہمیں اپنے سفارت کاروں کو بہترین سفارتی تربیت فراہم کرنا ہوگی،فارن سروس اکیڈمی کی تزئین و آرائش کیلئے پاکستان میں چین کے سفیر اور چائنہ ایمبیسی انتظامیہ کے ممنون ہیں۔وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی نے اولڈ چائنیز ایمبیسی میں واقع فارن سروسز اکیڈمی کا دورہ کیا اس موقع پر ڈی جی فارن سروس اکیڈمی ندیم ریاض نے وزیر خارجہ کا خیر مقدم کیا۔ وزیر خارجہ نے کہاکہ ہمیں اپنے افسران کی بہتر تربیت کیلئے انہیں روائتی سفارت کاری کے ساتھ ساتھ معاشی سفارت کاری، ثقافتی سفارت کاری کے رموز سے بھی روشناس کروانا ہو گا اس سلسلے میں سلیبس میں تبدیلی سمیت تمام ضروری اقدامات کئے جا رہے ہیں۔مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہاکہ کرونا وبا کے بعد تیزی سے بدلتی دنیا کے تقاضوں کو سامنے رکھتے ہوئے ہمیں اپنے سفارت کاروں کو بہترین سفارتی تربیت فراہم کرنا ہوگی تا کہ وہ عملی زندگی میں، اپنی صلاحیتوں کو بروئے کار لاتے ہوئے پاکستان کے مفادات کے تحفظ کو یقینی بنا سکیں۔مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہاکہ فارن سروس اکیڈمی کی تزئین و آرائش کیلئے پاکستان میں چین کے سفیر اور چائنہ ایمبیسی انتظامیہ کے ممنون ہیں۔ ڈی جی فارن سروس اکیڈمی ندیم ریاض اور اسپیشل سیکرٹری ایڈمن نے وزیر خارجہ کو اکیڈمی کے مختلف حصوں کا دورہ کروایا. جس میں لائبریری، اسٹڈی ایریا، رہایشی ایریا، ہاسٹلز، کھیلوں کے گراؤنڈز وغیرہ شامل ہیں۔

شاہ محمود

مزید :

صفحہ اول -