گھروں میں بیٹھے طلبہ کلام اقبال کا مطالعہ کریں،طاہر حمید تنولی

گھروں میں بیٹھے طلبہ کلام اقبال کا مطالعہ کریں،طاہر حمید تنولی

  

لاہور (لیڈی رپورٹر) کورونا وباء کے باعث گھروں میں بیٹھے طلباو طالبات اپنا وقت ضائع کرنے کے بجائے اسے قیمتی بنائیں۔ کلام اقبالؒ کا بغور مطالعہ اور اس پر عمل کریں۔ہمیشہ سچ بولیں، جہد مسلسل کو شعار بنائیں اور اپنی صلاحیتیں ملکی تعمیر وترقی کیلئے وقف کر دیں۔ نئی نسل مشاہیر تحریک پاکستان کی حیات وخدمات کا مطالعہ کرے ان خیالات کااظہار معروف دانشور اورماہر اقبالیات ڈاکٹر طاہر حمید تنولی نے نظریہئ پاکستان ٹرسٹ کے زیر اہتمام جاری اپنی نوعیت کے منفرد پروگرام نظریاتی سمر سکول کے 20 ویں سالانہ تعلیمی سیشن (آن لائن)کے نویں روز اپنے خطاب کے دوران کیا۔

اس سکول کا ماٹو ”پاکستان سے پیار کرو“ ہے۔ ڈاکٹر طاہر حمید تنولی نے کہا کہ کردار کا بحران ہر بحران کی اساس ہے۔ہمیں نئی نسل کو آزادی کی خاطر دی جانیوالی قربانیوں سے آگاہ کرنے کے ساتھ ساتھ مشاہیر تحریک آزادی کے اعلیٰ کردار سے بھی واقفیت دینی چاہئے۔

 ہمیں ان کی تربیت اس نہج پر کرنا ہو گی کہ وہ بھی اعلیٰ کردار کے حامل بنیں۔کرونا وباء کے بناعث تعلیمی ادارے بند پڑے ہیں توایسے میں گھروں میں بیٹھے طلبا وطالبات اپنے وقت کو ضائع کرنے کے بجائے قیمتی بنائیں،کلام اقبال کا مطالعہ کریں اور مثبت سرگرمیوں میں حصہ لیں۔ انہوں نے کہا کہ آپ کو یہاں بنیادی نظریات کی تعلیم دی جا رہی ہے۔ نظریاتی تعلیم وتربیت کی بدولت آپ کے اعتماد میں اضافہ اور شخصیت میں نکھار پیدا ہو گا۔ اس عمر میں سیکھی گئی باتیں تادیر یاد رہتی ہیں۔ طلبا وطالبات اپنے وقت اور صلاحیتوں کا بہترین استعمال اور بڑوں کا ادب واحترام کریں۔ ہمیں اپنے مشاہیر کو یاد رکھنا چاہئے، یہ سب اعلیٰ کردار کے حامل لوگ تھے۔انہوں نے قومی مفادات پر کسی قسم کی کوئی سودے بازی نہیں کی اور اصولوں پر ڈٹ گئے۔ ہمیں ان جیسا کردار اور خوبیوں کو اپنانا ہو گا۔ میری دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ آپ کو کامیابی سے نوازے اور آپ اپنے والدین کی امیدوں پر پورااترتے ہوئے قوم کا سرمایہ بنیں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -