معیشت کا حجم سکڑ گیا، خادم حسین

معیشت کا حجم سکڑ گیا، خادم حسین

  

لاہور(سٹی رپورٹر)تاجر رہنما و پاکستان سٹون ڈویلپمنٹ کمپنی کے بور ڈ آف ڈائریکٹرز کے رکن خادم حسین سینئر نائب صدر خادم حسین ایگزیکٹو ممبرلاہور چیمبرز آف کامرس نے عالمی مالیاتی ادارے(آئی ایم ایف) کی طرف سے ورلڈ اکنامک آؤٹ رپورٹ میں پاکستان کورونا وائرس کے باعث پاکستان کی معاشی شرح نمو مسلسل دو سال تک منفی رہنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہ کورونا وائرس نے 68سال بعد پاکستان کی معاشی شرح نمو کو منفی کردیا حکومتی اعداد و شمار کے مطابق رواں مالی سال جی ڈی پی گروتھ ریٹ صفر اعشاریہ تین آٹھ فیصد رہے گا۔معیشت کا حجم سکڑ گیا ہے عالمی بینک کی رپورٹ کے مطابق آئندہ سال میں پاکستان کی جی ڈی پی نمو منفی 4فیصد رہے رپورٹ میں شرح نمو پاکستان کے کی جی ڈی پی شرح نمو کے تین سال کے تخمینے کو مدنظر رکھ کرنظرثانی کرکے آئندہ مالی سال کیلئے منفی 1فیصد کی گئی ہے۔

، انہوں نے کہا کہ کورونا کے باعث لاک ڈاؤن سے ملکی معیشت کو بدترین نقصان پہنچا،حکومت دوسرے سال بھی اہم اقتصادی اہداف حاصل کرنے میں ناکام رہی اس لیے معاشی استحکام کیلئے اقدامات کیے جائیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے فیروز پور بورڈ کے تاجروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔خادم حسین نے کہا کہ احتیاطی تدابیر کے ساتھ ملک بھر میں تمام انڈسٹریز اور تمام شعبے کھول دیے جائیں تاکہ صنعتی و تجارتی سرگرمیوں سے ملکی معاشی صورتحال میں بہتر ی کے ساتھ ساتھ بے روزگار ہونے والوں کو روزگار بھی میسر آسکے۔اور ملکی معیشت بھی استحکام پذیر ہوسکے۔

مزید :

کامرس -