ڈیرہ: سیوریج لائن بند، گندہ پانی جمع ہونے پر شہری سراپا احتجاج

ڈیرہ: سیوریج لائن بند، گندہ پانی جمع ہونے پر شہری سراپا احتجاج

  

ڈیرہ غازیخان(سٹی رپورٹر) پی آئی اے آفس روڈ کی بوسیدہ سیوریج پائپ لائن بند، گندا پانی سڑک پر جمع، شہریوں کو آمدورفت میں پریشانی۔ بدبو اور تعفن سے بیماریاں پھیلنے کا اندیشہ۔علاقہ مکینوں اور دوکانداروں کا روڈ بلاک کر کے شدیداحتجاج۔ وفاقی وزیر موسمیات زرتاج گل اور کارپوریشن عملہ ودیگرکے خلاف نعرے بازی۔ وزیراعلی پنجاب اور کمشنر سے نوٹس لینے کا(بقیہ نمبر41صفحہ7پر)

مطالبہ۔ تفصیلات کے مطابق ڈیرہ شہر کے وسط میں وزیرموسمیات زرتاج گل کی رہائش گاہ کے قریب پی آئی اے دفتر کے سامنے روڈ کی بوسیدہ سیوریج پائپ لائن بیٹھ جانے کی وجہ سے سیوریج کا گندا پانی روڈ پر جوہڑ کی شکل اختیار کئے ہوئے ہے۔ جس کی وجہ سے دوکانداروں کا کاروبار ٹھپ ہوکر رہ گیا ہے اس کے ساتھ شہریوں کو جہاں آمدورفت میں پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اس کے ساتھ بدپو اور تفعن سے اردگرد کے مکینوں کو سخت پریشانی کا سامنا دیکھنا پڑ رہاہے۔مارکیٹ کے دوکانداروں اور تاجروں ارشد، ساجد،عمران، کاشف خان، باسط علی وغیرہ درجنوں افراد نے روڈ بلاک کرتے ہوئے ٹائر جلاکر اجتجاج کیا اور کہا کہ عرصہ دراز سے سیوریج لائن بیٹھ چکی ہے آئے روز سیوریج پائپ لائین بند ہونے سے سیوریج کا گندا پانی سڑک پر جمع ہوجاتا ہے۔یہاں تک کے سیوریج کا گندا پانی دکانوں کے اندر داخل ہوجاتا ہے انہوں نے کہا کہ تین روز سمارٹ لاک ڈاؤن کی وجہ سے دکانیں بند رہتی ہیں جبکہ باقی ایام میں وہ روڈ پر سیوریج کے کھڑے پانی کے سبب دکانیں کھول نہیں سکتے۔ کاروبار مکمل طور پر تباہ ہوگئے ہیں۔گٹر ابل رہے ہیں زرتاج گل کا گھر چند فٹ کے فاصلے پر ہے وہ اپنی نااہلی کی وجہ سے اپنے گھر کے سامنے کا روڈ نہیں بنوا سکتی ہیں انہیں عوام کے مسائل سے دلچسپی نہ ہے زرتاج گل، مشیر صحت حنیف پتافی اور کارپوریشن کے عملہ کو کئی مرتبہ درخواستیں بھی دیں۔مگر کوئی شنوائی نہیں ہوئی۔ انہوں نے وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار، کمشنر ڈیرہ ساجد ظفر سے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر سیوریج کی نئی پائپ لائن ڈالنے کے لئے احکامات جاری کریں۔

سراپااحتجاج

مزید :

ملتان صفحہ آخر -