کرونا کے وار جاری، مزید 2مریض جاں بحق، 19کی حالت تشویشناک

    کرونا کے وار جاری، مزید 2مریض جاں بحق، 19کی حالت تشویشناک

  

ملتان، شجاع آباد، رحیم یارخان، بوریوالا(وقائچ نگار، نمائندہ خصوصی، نمائندہ پاکستان، تحصیل رپورٹر)کروناوائرس کے وار جاری ہیں گزشتہ روز بھی ملتان میں مزید2مریض دم توڑ گئے جبکہ 19مریضوں کی حالت تشویشناک بتائی جارہی ہے تفصیل کے مطابقنشتر ہسپتال کے کورونا آئسولیشن وارڈ میں داخل مزید ایک مریض دم توڑ گیا ہے۔جبکہ کورونا وائرس کے 19 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔9 مریض (بقیہ نمبر1صفحہ6پر)

وینٹی لیٹر پر ہیں۔نشتر ہسپتال کے کورونا وائرس آئسولیشن وارڈ میں کورونا پازیٹو 53 مریض داخل ہیں۔گذشتہ 24 گھنٹے کے دوران نشتر ہسپتال میں کورونا وائرس کے شبہ میں 77 نئے مریض داخل ہوئے ہیں۔اب تک نشتر ہسپتال میں کورونا وائرس کے شبہ میں لائے گئے 1392 مریضوں میں سے 492 مریضوں میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوچکی ہے۔کورونا وائرس کے 126 مریض فوت ہوچکے ہیں۔کورونا وائرس کے 271 مریض صحت یاب ہوچکے ہیں۔35 ڈاکٹروں،13 نرسوں اور 6 پیرا میڈیکل سٹاف میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوچکی ہے۔نشتر ہسپتال میں 18 ہزار 148 افراد کے کورونا وائرس ٹسٹ کئے جاچکے ہیں۔2585 مریضوں میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ شجاع آباد کے نواحی علاقہ کا رہائشی پبلک ہائی سکول خانیوال میں تعینات ہونے والا پرنسپل لیاقت حسین کرونا وائرس کے باعث انتقال کر گئے لیاقت حسین کیمسٹری کے پروفیسر تھے مرحوم گورنمنٹ ہائر سکینڈری لاڑ ملتان میں سبجیکٹ سپیشلٹ تعینات رہے اور مخدوم عالی ہائی سکول میں ہیڈ ماسٹر اور جہانیاں میں بھی ہیڈ ماسٹر تعینات رہے اور بعد ازاں ضلع خانیوال میں ڈسٹرکٹ ایجوکیشن تعینات رہے پانچ روز قبل لیاقت حسین اپنے بیٹے جو کو رشیا میں ایم بی بی ایس کر رہے تھے ان کو لینے لاہور گئے اور تین روز بعد ان کی حالت بگڑ گئی جنہیں خانیوال کے نجی ہسپتال میں لے جایا گیا جنہوں نے ان کو نشتر ہسپتال لے جانے کا مشورہ دیا گیا نشترہسپتال ملتان میں وینٹی لیٹر نہ ملنے کی وجہ سے لیا قت حسین دم توڑ گئے ایس او پیز کے مطابق لیاقت حسین کی نماز جنازہ کے بعد انہیں خانیوال میں سپرد خاک کر دیا گیا ہے لیاقت حسین ڈاکٹر شوکت کے بڑے بھائی ہیں ان کے تین بھائی شجاع آباد کے نواحی علاقہ موضع رکن ہٹی ٹبی درکھاناں والی میں رہائش پذیر ہیں۔ عباسیہ ٹا?ن کا 43 سالہ عابد شہزاد اقبال نگر کی 60 سالہ طاہرہ تبسم کشمور کا 40 سالہ رضاق 35 سالہ شبیر چوک پٹھنستان کا 41 سالہ شبیر عباسیہ ٹا?ن کا 3 سالہ حماد اختر 28 سالہ ڈاکٹر طاہرہ 60 سالہ طاہر احمد رینجر ہیڈ کوارٹر کا 37 سالہ طیب حیات منٹھار روڑ کا 40 سالہ عتیق احمد کو کرونا وائرس کے شبہ میں ورثاء نے طبی امداد کیلئے شیخ زید ہسپتال منتقل کیا جہاں انتظامیہ نے تصدیق کیلئے نمونہ جات لیبارٹری روانہ کر دئیے 2 افراد حماد اختر اور عابد شہزاد کی رپورٹ مثبت آ گئی دیگر کی رپورٹ کا انتظار انتظامیہ نے تمام افراد کو قرنطینہ سینٹر منتقل کر دیا۔تحصیل بورے والا میں کورونا وائرس سے متاثر ہ مریضوں کی 83 ہوگئی۔ ڈپٹی ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر شاہد اقبال کے مطابق تحصیل بورے والا میں گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کورونا سے متاثرہ مریضوں کی تعداد بڑھ کر 83 ہوگئی ہے گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران پانچ نئے مریض سامنے آئے ہیں انہوں نے مزید بتایا کہ محکمہ صحت کی جانب سے بورے والا میں اب تک کرونا وائرس کے 1239مشتبہ افراد کے ٹیسٹوں میں سے 145 مریض کوروناوائرس سے متاثر ہیں جبکہ 61 مریضوں کو صحت مند ہو چکے ہیں جبکہ 180 مریضوں کے ٹیسٹوں کے نتائج کا انتظار کیا جارہا ہے۔ دوسری جانب کرونا وائرس سے متاثر اسسٹنٹ کمشنر بورے والا رانا اورنگزیب خان کی رپورٹ نیگیٹو آ گئی ہے اور وہ تیزی سے روبصحت ہیں سیاسی، سماجی اور صحافتی حلقوں نے ان کی جلد مکمل صحتیابی کے لئے نیک تمناؤں کا اظہار کیا ہے۔

کرونا

مزید :

ملتان صفحہ آخر -