شہری پر جسمانی تشدد، تہکال پولیس کے 3ریکارڈ 2روزہ جسمانی ریمانڈ

شہری پر جسمانی تشدد، تہکال پولیس کے 3ریکارڈ 2روزہ جسمانی ریمانڈ

  

شاور(نیوزرپورٹر)پشاورجوڈیشل مجسٹریٹ پشاور فاروق شاہ نے شہری پر جسمانی تشدد کرنے اور برہنہ ویڈیو بنانے اور وائرل کرنے کے الزام میں گرفتار تھانہ تہکال پولیس کے تین اہلکاروں کو دو روزہ جسمانی ریمانڈ پر ایف آئی اے کے حوالے کردیاہے جن سے پوچھ گچھ شروع کردی گئی ہے جمعرات کے روز پولیس کے کڑے پہرے میں تینوں اہلکاروں کو بکتربندگاڑی میں لاکرعدالت میں پیش کیاگیا ملزمان اے ایس آئی ظاہر اللہ، سپاہی نعیم اور سپاہی توصیف کو عدالت میں پیش کیا گیا توپشاوربارکے صدر اختر بلند اور دیگر وکلاء پرمشتمل پینل پولیس ملزموں کے خلاف عدالت میں پیش ہوئے اورعدالت سے ملزموں کے خلاف دفعات میں اضافہ کرنے کی استدعا کی جبکہ پولیس تفتیش پرعدم اعتماد کااظہارکیاجس پرعدالت نے ملزموں کو دو روزہ جسمانی ریمانڈ پرایف آئی اے کے حوالے کیاقبل ازیں عدالت کو بتایا گیا کہ ملزمان پر الزام ہے کہ انہوں نے پولیس کے حراست میں شہری ردیع اللہ عرف عامر تہکالے کو جسمانی تشدد کا نشانہ بنایا تھا اور اُس کی برہنہ ویڈیو بنائی اور پھر اُس ویڈیو کو سوشل میڈیا پر وائرل کردیاتھا جس کے بعد پولیس کے اعلی حکام کی ہدایات پر تینوں ملزمان کو معطل کیا گیا اور اُنکے خلاف مقدمہ درج کردیا گیا اور اُنہیں گرفتار بھی گیا گیا، ملزمان سے مزید تفتیش کی ضرورت ہے لہذا ملزمان کو جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالہ کردیا جائے عدالت نے پولیس کی جسمانی ریمانڈ کی درخواست منظور کرتے ہوئے تینوں پولیس اہلکاروں کو تین دن کی جسمانی ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کردیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -