سود کے خلاف فیصلہ، سٹیٹ بینک اور نجی بینکوں نے سپریم کورٹ سے رجوع کرلیا

سود کے خلاف فیصلہ، سٹیٹ بینک اور نجی بینکوں نے سپریم کورٹ سے رجوع کرلیا
سود کے خلاف فیصلہ، سٹیٹ بینک اور نجی بینکوں نے سپریم کورٹ سے رجوع کرلیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سود کے خلاف دیے گئے وفاقی شرعی عدالت کے فیصلے کے خلاف سٹیٹ بینک او رچار نجی بینکوں نے سپریم کورٹ سے رجوع کرلیا۔

بینکوں کی جانب سے دائر کی گئی درخواست میں وزارت خزانہ، وزارت قانون اور چیئرمین بینکنگ کونسل سمیت دیگر کو فریق بنایا گیا ہے۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ وفاقی شرعی عدالت نے سپریم کورٹ ریمانڈ آرڈر کو سامنے نہیں رکھا اور رولز میں ترمیم کا حکم دے دیا۔ شرعی عدالت کے فیصلے کیخلاف اپیل کو منظور کیا جائے اور فیصلے میں اٹھائے گئے نکات کی حد تک ترمیم کی جائے۔

خیال رہے کہ وفاقی شرعی عدالت نے 28 اپریل کو سود کیخلاف درخواستوں پر فیصلہ سنا تے ہوئے قرار دیا تھا کہ  سود سے پاک بینکاری دنیا بھر میں ممکن ہے، معاشی نظام سے سود کا خاتمہ شرعی اور قانونی ذمہ داری ہے۔حکومت اندرونی اور بیرونی قرض سود سے پاک نظام کے تحت لے۔ سی پیک کیلئے  چین  بھی اسلامی بینکاری نظام کا خواہاں ہے، تمام بینکنگ قوانین جن میں انٹرسٹ کا ذکر ہے وہ ربا کہلائے گا حکومت تمام قوانین میں سے انٹرسٹ کا لفظ فوری حذف کرے۔

مزید :

قومی -بزنس -