اسلامی فوجی اتحاد کی سربراہی ،راحیل شریف کو این او سی جاری ، اپریل میں معاہدے پر دستخط

اسلامی فوجی اتحاد کی سربراہی ،راحیل شریف کو این او سی جاری ، اپریل میں ...

  

اسلام آباد( ایجنسیاں)وفاقی حکومت نے سابق آرمی چیف جنرل (ر)راحیل شریف کواسلامی فوجی اتحاد کے سربراہ کے لئے این او سی جاری کر دیا ہے۔ راحیل شریف تین سال کے لئے اتحاد کے سربراہ ہوں گے۔ نجی ٹی وی نے ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ وفاقی حکومت کی طرف سے این او سی جاری ہوجانے کے بعد جنرل (ر) راحیل شریف اب اپریل کے پہلے ہفتے سعودی عرب جا کر کنٹریکٹ پر باضابطہ دستخط کریں گے ۔ حکومت اس فیصلے کے حوالے سے آئندہ ایک دو روز میں جی ایچ کیو بھی آگاہ کر دے گی ۔ مزید بتایا گیا ہے کہ پاکستان نہ صرف اس اتحاد کی سربراہی کرے گا بلکہ اتحاد میں بھرتی ہونے والے اہلکاروں کی تربیت بھی کی جائے گی۔ایک دو روز میں جی ایچ کیو کو بھی فیصلے سے آگاہ کر دیا جائیگا،پاکستان کے عسکری ادارے اتحاد میں بھرتی ہونیوالے اہلکاروں کی تربیت بھی کرینگے۔ دریں اثناوزیر دفاع خواجہ محمد آصف نے کہا ہے کہ حکومت پاکستان نے سعودی حکومت کو تحریری طور پر یقین دہانی کرادی ہے کہ سابق آرمی چیف راحیل شریف اسلامی فوجی اتحاد کے سربراہ مقرر کیے جا سکتے ہیں۔ نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ سعودی حکومت نے حکومت پاکستان سے تحریری اجازت مانگی تھی، پاکستان نے سعودی حکومت کو تحریری طور پر آگاہ کر دیا ہے کہ ہمیں کوئی اعتراض نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ابھی تک جنرل راحیل شریف کی طرف سے کوئی درخواست موصول نہیں ہوئی تاہم اصولی طور پر جنرل(ر) راحیل شریف کے اسلامی فوجی اتحاد کی سربراہی کے معاملات طے پا چکے ہیں، صرف رسمی کارروائی باقی ہے۔ جنرل( ر) راحیل کا سعودی عرب جا کر اسلامی افواج کی قیادت سنبھالنا ان کا ذاتی نہیں بلکہ 2حکومتوں کا معاملہ ہے،وہ اسلامی فوجی اتحاد کا ڈھانچہ ترتیب دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ممبر ممالک کی ایڈوائزری کونسل کا اجلاس مئی میں سعودی عرب میں متوقع ہے۔

جنرل راحیل

مزید :

صفحہ اول -