پاکستان کی طویل قامت خاتون زینب بی بی ذیابیطس اور جوڑوں کے درد میں مبتلا

پاکستان کی طویل قامت خاتون زینب بی بی ذیابیطس اور جوڑوں کے درد میں مبتلا

  

ٹوبہ ٹیک سنگھ ( نیٹ نیوز )پاکستان کی طویل قامت خاتون اور 2003 میں دنیا کی سب سے لمبی خاتون کا اعزاز رکھنے والی سابق عالمی ریکارڈ یافتہ زینب بی بی ذیابیطس اور جوڑوں کے درد میں مبتلا ہوگئی ہیں۔ٹوبہ ٹیک سنگھ سے 14 کلومیٹر کے فاصلے پر موجود علاقے رجانہ میں واقع اپنے گھر میں صحافیوں سے بات کرتے ہوئے زینب بی بی نے بتایا کہ جب وہ 15 برس کی تھیں تو ان کا قد بڑھنا شروع ہوا اور وہ اب 45 سال کی ہوچکی ہیں۔22 سال کی عمر میں زینب بی بی کا قد 7 فٹ 2 انچ تھا۔زینب کا تعلق ایک غریب خاندان سے ہے، ان کی 5 بہنیں ہیں اور تاحال وہ غیر شادی شدہ ہیں، ان کے مطابق ان کا قد ان کی شادی کی راہ میں رکاوٹ بنا۔زینب بی بی 1998 میں اْس وقت معروف ہوئیں جب وہ پاکستان ٹیلی وڑن کے پروگرام نیلام گھر میں شریک ہوئیں، 2003 میں انہیں دنیا کی طویل قامت والی خاتون قرار دے کر ان کا نام گنیز بک آف ورلڈ ریکارڈ میں شامل کیا گیا۔زینب بی بی برطانیہ، فرانس، جرمنی اور سعودی عرب سمیت 15 ممالک کا دورہ کر چکی ہیں، انہوں نے اندرون و بیرون ملک عوامی تقریبات میں شرکت کرکے پیسے بھی کمائے۔زینب بی بی نے 2008 میں برطانیہ میں سیاسی پناہ کے لیے درخواست دی، مگر ان کی درخواست مسترد کردی گئی۔انہوں نے بتایا کہ جب وہ سعودی عرب میں تھیں تو انہوں نے وہاں وزیراعظم نواز شریف سے بھی ملاقات کی، جنہوں نے وعدہ کیا کہ حکومت میں آنے کے بعد وہ ان کے لیے ماہانہ وظیفہ مقرر کرنے سمیت ان کے لیے دیگر اقدامات بھی کریں گے۔ وہ صرف نواز شریف کو ان کے الفاظ یاد دلانا چاہتی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ وہ انسولین استعمال کر رہی ہیں اور ہسپتال جانے سے بھی قاصر ہیں کیوں کہ لمبے قد اور بیماری کے باعث وہ بس اور رکشہ میں سفر نہیں کرسکتیں۔انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ انہیں ہسپتال پہنچانے کے لیے ایمبولینس کا بندوبست کیا جائے۔زینب کی ایک بہن اپنے گھر کے باہر پکوڑے فروخت کرتی ہیں اور وہ ہی ان کی ضروریات بھی پوری کرتی ہیں۔انہوں نے وزیراعظم نواز شریف اور وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف پر زور دیا کہ وہ ان کا علاج کرائیں اور ان کی ضروریات پوری کریں۔

مزید :

صفحہ اول -