وفاق کو متوازن کئے بغیر تبدیلی ممکن نہیں،غلام فرید کوریجہ

وفاق کو متوازن کئے بغیر تبدیلی ممکن نہیں،غلام فرید کوریجہ

  

عالیوالا،مٹھن کوٹ (نامہ نگار )سرائیکستان قومی اتحاد کے سربراہ و چےئرمین تحریک فرید پاکستان و خانوادہ فرید خواجہ غلام فرید کوریجہ نے ملتان سے واپسی پر ڈیرہ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا وفاق کو متوازن کیے بغیر چہرے تبدیل ہو سکتے ہیں تبدیلی نہیں۔ پنجاب صوبہ کو دہشت گردی کا مرکز بنایا(بقیہ نمبر18صفحہ12پر )

جا رہا ہے ۔سرائیکی خطہ کو کھنڈر بنا کر لاہور کی اورنج ٹرین چلائی جا رہی ہے۔ کڈنی سنٹر کی نجکاری قبول نہیں، علاج غریب آدمی کی پہنچ سے دور ہو جائے گا۔ پنجاب حکومت کی طرف سے صوفی درباروں کی بندش اور سندھی رسومات پر پابندی ایسے معلوم ہوتا ہے کہ وزیر اعلیٰ پنجاب نے کالعدم گروپوں کی بیٹھک کرنی ہے۔ 26 مارچ کو وحدت المسلمین کی درباروں اور روحانی مقامات کی بندش کے اقدام کے موضوعیکجہتی کانفرنس کا انعقاد کیا جا رہا ہے جس میں سجادگان اور مشائخ عظام کو دعوت دی گئی ہے وحدت المسلمین حمایت کرتے ہیں۔ سرائیکی صوبہ متوازن وفاق کی علامیت فاٹا کو پختون خواہ میں شامل کرنے کی حمایت کرتے ہیں دائیں بازوں کی تنظیموں کی طرف سے فاٹا کو پختونخواہ میں شامل کرنے کے مطالبہ کی مخالفت درست نہیں دربار فرید پر قوالی پر بھی پابندی لگا دی گئی ہے۔پابندیوں کے خلاف ایس کیو آئی کی مسلسل 89 ہفتوں سے احتجاج کر رہی ہے برجمع دربار فرید پر پابندیوں کے خلاف دھرنا دیا جاتا ہے۔ اس موقع پر ایس کیو آئی کے رہنما نذر حسین کے ظہرانے میں شرکت کی جس میں فیض کریم بھٹی، منظور حسین جتوئی، رمضان جتوئی، اجمل ملک بھی موجود تھے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -