وزیر اعلٰی کی دور ان ملازمت فوتیدگی اور سن کوٹہ پر کلاس فور کی بھرتی کیلئے سیکرٹری تعلیم کو ہدایت

وزیر اعلٰی کی دور ان ملازمت فوتیدگی اور سن کوٹہ پر کلاس فور کی بھرتی کیلئے ...

  

پشاور( سٹاف رپورٹر )وزیر اعلی خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے دوران ملازمت فوتگی اور سن کوٹہ پر کلاس فور کی بھرتی کیلئے سیکرٹری تعلیم کو ہدایت کی کہ سٹینڈنگ آرڈر جاری کریں اور اس عمل کو ایک مہینے کے اندر مکمل کریں۔ ورثاء میں امیدوار نہ ملیں تو آسامیوں پر اوپن بھرتی کریں۔انہوں نے ہدایت کی کہ بلدیاتی نظام کے تحت منتقل شدہ محکموں میں ٹرانسفر یا بھرتی کی صورت میں مجوزہ لسٹ 15 دن کے اندر ناظم کو بھیجی جائے اگر اس پر اعتراض نہ ہو تب حتمی احکامات جاری کئے جائیں۔وہ وزیر اعلی ہاوس پشاور میں اعلی سطح کے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے ۔صوبائی وزیر برائے زراعت اکرام اﷲ گنڈ ا پور ، صوبائی وزیر تعلیم محمد عاطف خان، سیکرٹری بلدیات سید جمال الدین شاہ، سیکرٹری ایلمنٹری اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن ڈاکٹر شہزاد بنگش، ڈائریکٹر ایجوکیشن رفیق خٹک، ڈی سی ڈی آئی خان معتصم با ﷲ شاہ،ایم پی ایز ، ضلع ناظم ڈیرہ اسماعیل خان اور دیگر متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔محکمہ تعلیم کے حوالے سے احکامات جاری کرتے ہوئے وزیراعلی نے ہداہت کی کہ اگر کوئی بھی EDO دفتر سے باہر فیلڈ میں ڈیوٹی پر جاتا ہے تو دفتر میں تحریری صورت میں لکھ کر چھوڑ دیا کریں۔انہوں نے سیکرٹری تعلیم کو ہدایت کی کہ جونیئر کلرک کی مطلوبہ تعلیمی قابلیت بڑھائی جائے اور ٹائپنگ کے ساتھ کمپیوٹر بھی لازمی قرار دیا جائے۔پرویز خٹک نے بلدیاتی نظام کا مکمل نفاز یقینی بنانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے ہدایت کی کہ اس سلسلے میں وزیر اعلی سمیت کسی کی مداخلت نہیں ہے اور نہ کسی کی مداخلت ہونی چاہیئے۔ اگر کسی کو سیاسی بنیادوں پر ٹرانسفر کیا گیا ہو تو اُن کو واپس کیا جائے ۔ شوگر کین کے حوالے سے انہوں نے ہدایت کی کہ پیداوار کی شرح کے مطابق وسائل دیئے جائیں اور اس حوالے سے ڈی سی کی سربراہی میں پہلے سے موجود کمیٹی میں ڈیڈک کا چیئرمین بھی شامل کیا جائے۔وزیر اعلی نے مزید ہدایت کی کہ دفاتر میں افسران عوام سے شائستہ زبان کے ساتھ برتاؤ کریں اور عوامی مسائل کے حل میں اپنی ذمہ داریاں بہتر انداز میں ادا کریں۔ اگر سرکاری افسران عوام کو عزت دیں گے تو عوامی نمائندے بھی افسران کی عزت کریں گے۔

پشاور( سٹاف رپورٹر )وزیر اعلی خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے چائنہ انجینئر نگ کمپنی کی خیبر پختونخوا کے مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کے لئے دلچسپی کا خیر مقدم کیا ہے اور کہا ہے کہ وہ صوبے میں بیرونی سرمایہ کاری کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔ صوبے میں سرمایہ کاری کے وافر مواقع موجود ہیں۔انکی حکومت نے سرمایہ کاروں کو پر کشش مراعات کی پیشکش کی ہے اور سرمایہ کاری کے لئے سازگار ماحول بنا دیا ہے۔یہی وجہ ہے کہ چین سمیت دیگر بیرونی سرمایہ کار خیبر پختونخوا کا رخ کر رہے ہیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے وزیر اعلیٰ ہاؤس پشاور میں چینی سرمایہ کار کمپنی (چائنہ انجینئر نگ کمپنی) کے نمائندہ وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔سیکرٹری محکمہ بلدیات سید جمال الدین شاہ، سیکرٹری مواصلات و تعمیرات آصف خان، ایم ڈی پختونخوا ہائی ویز اتھارٹی عزیر خان، خیبر پختونخوا اکنامک زون ڈویلپمنٹ اینڈ مینجمنٹ کے چیف ایگزیکٹیو غلام دستگیر، محسن سید اور دیگر متعلقہ حکام بھی اس موقع پر موجود تھے۔ملاقات میں چینی وفد نے پشاور میں 40کلومیٹر طویل رنگ روڈاور پشاور بس ٹرمینل میں ترقیاتی منصوبوں کی تعمیر میں سرمایہ کاری کے لئے اپنی دلچسپی کا اظہار کیا۔وزیر اعلیٰ نے چینی سرمایہ کاروں کا خیر مقدم کیا اور کہا کہ انہوں نے خیبر پختونخوا کو سرمایہ کاری کے لئے اوپن کر دیا ہے۔ آئندہ ماہ چین میں روڈ شو کر رہے ہیں جس میں سرمایہ کاری کے منصوبوں کو شو کیس کریں گے۔ہم نے صوبے کے مختلف شعبوں میں تقریباً 100منصوبوں کو روڈ شو کے لئے لے کر جانا ہے۔ ہمارے اکثر منصوبے سی پیک کے تناظر میں ہیں۔ہمارے دروازے ہر کسی کے لئے کھلے ہیں اور ہم صوبے میں سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کرتے ہیں۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ موجودہ پشاور بس ٹرمینل کو شہر سے باہر چمکنی کے مقام پر منتقل کر رہے ہیں جہاں 100ایکڑ اراضی پر مشتمل بین الاقوامی معیار کا اڈہ تعمیر کر رہے ہیں جس میں مسافروں کو معیاری سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ موجودہ بس ٹرمینل کی جگہ پر سی پیک ٹاور اور کمرشل کمپلیکس تعمیر کیا جائے گا۔۔ انہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ وہ چینی سرمایہ کاروں کی دلچسپی کو مد نظر رکھتے ہوئے ان سے روابط میں رہیں۔وزیر اعلیٰ نے وفد سے کہا کہ وہ بھی اپنی پروپوزل متعلقہ حکام کو بھیج دیں۔دریں اثناء بیسٹ وے سیمنٹ کمپنی کے مینجمنٹ کے وفد نے سید آصف شاہ کی سربراہی میں وزیر اعلیٰ سے ملاقات کی اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔ وفد نے خیبر پختونخوا میں ایک بڑا سیمنٹ پلانٹ لگانے کے لئے اپنی دلچسپی سے وزیر اعلیٰ کو آگاہ کیا۔اس موقع پر سیکرٹری معدنیات اور ڈی جی معدنیات بھی موجود تھے۔ پرویز خٹک نے وفد کو یقین دلایا کہ کمپنی کی تجویز کے سلسلے میں کسی بھی ممکنہ حل پر غور کیا جائے گا۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -