سرکاری سکولوں میں پرائمری کلاسوں کے لیے صرف خواتین اساتذہ تعینات کرنے کا فیصلہ

سرکاری سکولوں میں پرائمری کلاسوں کے لیے صرف خواتین اساتذہ تعینات کرنے کا ...
سرکاری سکولوں میں پرائمری کلاسوں کے لیے صرف خواتین اساتذہ تعینات کرنے کا فیصلہ

  

اسلام آباد(صباح نیوز)ملک بھر کے سرکاری سکولوں میںپرائمری کلاسوں کے لیے صرف خواتین اساتذہ تعینات کرنے کا فیصلہ،وفاق اور صوبوں کی سطح پر مرحلہ وارخواتین اساتذہ بھرتی کیے جا ئیں گے۔

ذرائع کے مطابق وفاق اور صوبوں نے اتفاق کیا ہے کہ ملک بھر کے سرکاری سکولوں میںپرائمری کلاسوں کے لیے صرف خواتین اساتذہ کوتعینات کیا جائے گاتعلیمی اداروں میںخواتین اساتذہ کی تعیناتی بتدریج کی جائے گی۔ بچوں اور بچیوں کو مرد اساتذہ کے بجائے صرف لیڈی ٹیچرز پڑھائیں گی اس ضمن میں صوبوں اور وفاق نے اتفاق رائے کرتے ہوئے مرحلہ وار خواتین اساتذہ بھرتی کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے ، پرائمری سطح تک صرف خواتین اساتذہ کے پڑھانے کے فیصلے کو نئی قومی تعلیمی پالیسی میں بھی شامل کر لیا گیا ہے۔

ذرائع کے مطابق ملک بھر کے پرائمری سطح کے سکولوں میں طلباءکیلئے مرد اساتذہ اور طالبات کیلئے خواتین اساتذہ تدریسی خدمات سر انجام دے رہی ہیں ، وزارت وفاقی تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت نے صوبوں کے ساتھ مشاورت کے بعدفیصلہ کیا ہے کہ ملک بھر میں طلبا و طالبات کے پرائمری سطح کے سرکاری سکولوں میں صرف خواتین اساتذہ تدریسی خدمات انجام دیں گی اس ضمن میں وفاق اور صوبوں میں اتفاق رائے ہو گیا ہے اور اس فیصلے کو نئی تعلیمی پالیسی کا حصہ بنایا گیا ہے پرائمری سطح کے سرکاری سکولوں میں صرف خواتین اساتذہ کو تدریسی خدمات انجام دینے کیلئے مرحلہ واربھرتیاں کی جائیں گی تاہم ذرائع کے مطابق اس فیصلہ میں عملدرآمد کیلئے کئی سال لگ سکتے ہیں کیونکہ یکدم خواتین اساتذہ کی بھرتیاں کرنا مشکل ہے اوربچوں کے سکولوں میں پہلے سے تدریسی خدمات انجام دینے والے مرد اساتذہ کو کیسے دوسرے تعلیمی اداروں میں کھپایا جا ئیگا۔

مزید :

اسلام آباد -