نوجوان حاملہ لڑکی ڈاکٹر کے پاس چیک اپ کے لیے گئی تو اس نے ایسی خبر سنا دی کہ واقعی زندگی کا سب سے زوردار جھٹکا دے دیا، کبھی سوچ بھی نہ سکتی تھی کہ اس کے گردوں، جگر اور دماغ میں۔۔۔۔

نوجوان حاملہ لڑکی ڈاکٹر کے پاس چیک اپ کے لیے گئی تو اس نے ایسی خبر سنا دی کہ ...
نوجوان حاملہ لڑکی ڈاکٹر کے پاس چیک اپ کے لیے گئی تو اس نے ایسی خبر سنا دی کہ واقعی زندگی کا سب سے زوردار جھٹکا دے دیا، کبھی سوچ بھی نہ سکتی تھی کہ اس کے گردوں، جگر اور دماغ میں۔۔۔۔

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں ایک 8ماہ کی حاملہ خاتون معمول کے چیک اپ کے لیے ڈاکٹر کے پاس گئی جہاں ڈاکٹر نے اسے ایسی ہولناک خبر سنا دی کہ اس کی زندگی ہی اجڑ گئی اور اسے وقت سے پہلے ہی بچے کو جنم دینا پڑ گیا کیونکہ اس کی زندگی محض چند گھنٹے ہی باقی رہ گئی تھی۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 30سالہ ڈینیلا جینوفسکی نامی اس خاتون کو ڈاکٹر نے بتایا کہ وہ بیک وقت دماغ، معدے، گردوں اور جگر کے کینسر میں مبتلا ہے، جو آخری مرحلے میں داخل ہو چکا ہے اور اس کے پاس زندہ رہنے کے لیے چند ہی دن باقی ہیں۔

امریکہ کے نائٹ کلب میں فائرنگ کا دوسرا بڑا واقعہ ،ایک شخص ہلاک 14زخمی ،پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا, ملزموں کی تلاش جاری

رپورٹ کے مطابق یہ بری خبر سن کر ڈینیلا نے پیٹ میں موجود بچے کی قبل از وقت پیدائش کا فیصلہ کیا اور ڈاکٹروں نے آپریشن کے ذریعے بچے اس کے پیٹ سے نکال لیا۔ اس کے 3روز بعد ڈینیلا کی موت واقع ہو گئی۔ پیدائش کے وقت بچے کا وزن صرف آدھا کلوگرام تھا ، جسے مشینوں کے ذریعے زندہ رکھا گیا۔ اب اس کی حالت بہتر بتائی جاتی ہے تاہم وہ اب بھی پنسلوانیا کے نیونیٹل ہسپتال میں انتہائی نگہداشت یونٹ میں زیرعلاج ہے۔ڈینیلاکی شادی کو پانچ سال ہوئے تھے اور اس کی ایک 4سالہ بیٹی بھی تھی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -