سمجھوتہ ایکسپریس متاثرین کا بھارتی عدالت کے فیصلے کیخلا ف احتجاجی مظاہرہ، اقوام متحدہ دفتر کے باہر احتجاج کا اعلان

سمجھوتہ ایکسپریس متاثرین کا بھارتی عدالت کے فیصلے کیخلا ف احتجاجی مظاہرہ، ...

لاہور ( این این آئی) بھارتی سپریم کورٹ کی جانب سے سانحہ سمجھوتہ ایکسپریس کے ملزمان انتہاپسند ہندوؤں کو بری کئے جانے کے فیصلے کے خلاف سمجھوتہ ایکسپریس کے متاثرین نے فیصل چوک مال روڈ پر شدید احتجاج کرتے ہوئے بھارت کیخلاف نعرے بازی کی ، متاثرین نے حکومت پاکستان سے عالمی عدالت میں کیس لڑنے کا مطالبہ کرتے ہوئے اسلام آباد میں اقوام متحدہ کے دفتر کے باہر احتجاج کا اعلان کر دیا۔تفصیلات کے مطابق سمجھوتہ ایکسپریس متاثرین کمیٹی کے سربراہ رانا محمد عظیم کی زیرقیادت فیصل چوک مال روڈ پر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں سمجھوتا ایکسپریس متاثرین سے اظہار یکجہتی کیلئے سول سوسائٹی کے نمائندے بھی شریک ہوئے ۔مظاہرین کی طرف سے انتہا پسند ہندوؤں کو بری کرنے پر بھارت کے خلاف شدید نعرے بازی کی گئی ۔ اس موقع پر سمجھوتہ ایکسپریس متاثرین کمیٹی کے سربراہ رانا محمد عظیم نے کہا کہ بھارتی سپریم کورٹ بھی انتہا پسندوں سے خوفزدہ ہے،سمجھوتہ ایکسپریس میں زندہ جلائے جانے والوں کے لواحقین کو ہر صورت انصاف دلایا جائے گا۔ سمجھوتہ ایکسپریس کے متاثرین نے مطالبہ کیا ہے کہ حکومت پاکستان ان کا کیس عالمی عدالت میں لڑے۔سمجھوتہ ایکسپریس میں زندہ جلائے جانے والے بچوں کی والدہ رخسانہ بی بی کا کہنا تھا کہ بھارتی عدلیہ اور بھارتی حکومت کی دوغلی پالیسی پوری دنیا کے سامنے آگئی ہے اور انصاف کا خون کیا گیا ہے ۔سانحہ میں شہید ہونے والے کامران کی والدہ مسرت امین نے مطالبہ کیا کہ بھارتی سپریم کورٹ سے ہمیں انصاف کی امید نہیں لہٰذا حکومت پاکستان ہمارا کیس عالمی عدالت میں لیکر جائے۔ سانحہ سمجھوتہ ایکسپریس کے متاثرین نے حکومت پاکستان سے عالمی عدالت میں کیس لڑنے کا مطالبہ کرتے ہوئے اعلان کیا کہ آئندہ چند روز میں اسلام آباد میں اقوام متحدہ کے دفتر کے باہر بھی احتجاج کیا جائے گا ۔

سانحہ سمجھوتہ ایکسپریس

مزید : پشاورصفحہ آخر