ہو سکتا ہے نریندرمودی مستقبل میں میر واعظ کی جماعت پر بھی پابندی لگادے

ہو سکتا ہے نریندرمودی مستقبل میں میر واعظ کی جماعت پر بھی پابندی لگادے

سابق وزیر خارجہ سر دار آصف احمد علی نے کہا ہے کہ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی پر جب بھی مشکل پڑتی ہے تو کبھی وہ پاکستانی بارڈر پر چھیڑ چھاڑ شروع کردیتا ہے تو کبھی کشمیری جماعتوں پر غیر قانونی پابندی لگا دیتا ہے اس سے پہلے بھی اس نے کشمیر کی متحرک جماعت اسلامی پر پابندی لگائی اب جے کے ایل ایف پر پابندی لگائی ہے اور ہو سکتا ہے کہ مستقبل میں وہ میر واعظ عمر فاروق کی جماعت حریت پر بھی غیر قانونی پابندی لگادے ۔ایشو آف دی ڈے میں گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ کشمیر کی تین مضبوط جماعتیں اور آوازیں ہیں جن میں سید علی گیلانی ‘ نوجوان یاسین ملک اور میر واعظ عمر فاروق جب جب بھارت پر کڑا وقت آیا ہے تواس نے ان لیڈروں کو نظر بند اور گرفتار بھی کیا ہے اور ان جماعتوں پر پابندی بھی لگائی ہے لیکن بھارت کے اس غیر قانونی اور غیر جمہوری اقدام کا اقوام متحدہ کو فوری نوٹس لینا چاہئے ۔

سر دار آصف احمد علی

مزید : صفحہ اول