حنیف عباسی سزا معطلی اپیل‘ سرکاری وکیل کو جواب جمع کرانے کا آخری موقع

حنیف عباسی سزا معطلی اپیل‘ سرکاری وکیل کو جواب جمع کرانے کا آخری موقع

لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ کی جسٹس عالیہ نیلم اور جسٹس سردار محمد سرفراز ڈوگر پر مشتمل دو رکنی بنچ نے مسلم لیگ (ن )کے راہنما حنیف عباسی کی سزا معطلی کے لئے دائر اپیل پرسرکاری وکیل کو جواب داخل کرانے کا آخری موقع دیتے ہوئے کیس کی سماعت 28مارچ تک ملتوی کردی ،عدالت نے دوران سماعت ریمارکس دیئے کہ آئندہ سماعت پر کوئی بہانہ نہیں سنا جائے گا،آئندہ سماعت پر متفرق درخواستوں پر دلائل سنے جائیں گے۔درخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ حنیف عباسی جیل میں چار مختلف بیماریوں میں مبتلا ہیں،جیل میں حنیف عباسی کو ہارٹ اٹیک ہو چکا ہے، انسدادِ منشیات کی عدالت نے فیصلہ میں اہم قانونی نکات کو نظر انداز کیاہے،ادویات سازی کے لئے ایفی ڈرین منگوائی گئی،اس کیس میں نامزد دیگر سات ملزمان کو رہا کردیا گیا ہے، درخواست گزار کو سیاسی انتقام کا نشانہ بناتے ہوئے سزاء سنائی گئی ہے،ماتحت عدالت کی جانب سے سنائی جانے والی سزاء معطل کرکے ضمانت منظور کی جائے اور ان کی رہائی کاحکم دیا جائے،حنیف عباسی نے ایفی ڈرین کیس میں سزا معطلی کی اپیل دائر کر رکھی ہے،ہائیکورٹ کا دو رکنی راولپنڈی بنچ اس اپیل پر سماعت سے معذرت کر چکا ہے،چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ نے اس اپیل کو لاہور میں سماعت کرنے کی درخواست منظور کی تھی۔

مزید : صفحہ آخر