ڈہرکی ‘ معمولی جھگڑے پر فائرنگ ‘ نوجوان قتل ‘ ورثاکا احتجاجی مظاہرہ

ڈہرکی ‘ معمولی جھگڑے پر فائرنگ ‘ نوجوان قتل ‘ ورثاکا احتجاجی مظاہرہ

ڈہرکی(نامہ نگار)ڈہرکی کے قریب نرلی شاخ کے مقام پرمسلح افراد نے معمولی تنازعہ پر فائرنگ کرکے ایک نوجوان کو قتل کر دیا ‘ورثا کا لاش قومی شاہرہ پر رکھ کرسخت احتجاجی مظاہرہ۔تفصیلات کے مطابق ڈہرکی کے قریبی گاؤں جام فارم کے رہائشی نوجوان لیاقت علی ملک کوڈہرکی آتے ہوئے(بقیہ نمبر38صفحہ12پر )

موٹرسائیکل پر سوار گرگیج برادری کے مسلح افراد نے فائرنگ کرکے قتل کرکے فرار ہوگئے ورثا اطلاع ملنے پر جائے وقوعہ پرپہنچ کر نوجوان کی لاش اٹھا کر ڈہرکی کے بائی پاس قومی شاہرہ پر رکھ کرروڈبند کرکے سخت احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے قاتلوں کی گرفتاری کیلئے ملک برادری کے درجنوں مردو خواتین اپنے معصوم بچوں سمیت دھرنا لگا کر بیٹھ گئے جسکے باعث سندھ اورپنجاب سے آنے جانے والی تمام ٹریفک رک گئی روڈ کے دونوں اطراف گاڑیوں کی لمبی لائین لگ گئی دھرنا کے دوران مقتول کے ورثا اکبر علی ملک،نادر علی،علی حسن ملک اوردیگرنے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا ہے کہ ہماراگرگیج برادری سے معمولی بات پر تنازعہ چل رہا تھا جسکی بنا پرآج گرگیج برادری کے مسلح افرادنے فائرنگ کرکے ہمارے بے گناہ نوجوان کو قتل کردیا ہے اور پولیس قاتلوں کوگرفتارکرنے سے گریزاں ہے جسکی وجہ سے ہم لوگ مجبور ہوکرنوجوان کی لاش روڈپر رکھ کراپنے معصوم بچوں اورخواتین سمیت احتجاج کررہے ہیں اس داران پولیس نے مظاہرین سے کامیاب مذکرات کرکے مقدمہ درج کرنے اور قاتلوں کی گرفتاری کی یقین دھانی کرائی تومظاہرین نے اپنا احتجاج ختم کرکے قومی شاہرہ کھول دی۔

نوجوان

مزید : ملتان صفحہ آخر