ڈہرکی سے لڑکیاں غائب ‘ خانپور میں ہندو برادری کی احتجاجی ریلی ‘ انتظامیہ پر غفلت کا الزام

ڈہرکی سے لڑکیاں غائب ‘ خانپور میں ہندو برادری کی احتجاجی ریلی ‘ انتظامیہ پر ...

خان پور (نمائندہ پاکستان )ڈھر کی سے لڑکیوں کے اغوا کا مسئلہ شدت اختیار کرگیا ‘ خان پور میں ہندو کمیونٹی کی احتجاجی ریلی ریلی (بقیہ نمبر27صفحہ12پر )

سے خطاب کرتے ہوئے کونسلر چھوٹو رام اور دینا رام ساگر نے کہا کہ ہندو لڑکیوں کو ورغلا کر مسلمان کیا جارہا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ لڑکیوں کی عمریں 13/15سال ہے جو کہ سرکاری طور پر نا بالغ ہیں لیکن انہیں اغواکر کے زبردستی مسلمان کیا گیا ہے انہوں نے کہا کہ سرکاری انتظامیہ ہم سے تعاون نہیں کرتی ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ ہندو لڑکیوں کو فوری بر آمد کر کے والدین کے حوالے کیا جائے ۔ ریلی میں پریتم لال ،گھیم چند ،اومی راٹھور ، امیت کمار، شگن لال ، درشن رام ، دیوان چند ، دیپک کمار،وکی کمار ،مکیش کمار، اجمل رام ، گلورام ، پر کاش رام ، سویند ر لال ، درشن لال ، ریشم رام ،اکرم رام ، گلشن رام ، بیرم رام ، رامیش لال کے علاوہ ہندو برادری کے سینکڑوں نو جوان وبزرگ شامل تھے ۔جنہوں نے پریس کلب کے باہر شدید احتجاج کیا ہے ۔

ریلی

مزید : ملتان صفحہ آخر