عمرکوٹ: یوٹیلیٹی سٹورز سے آٹا غائب، عوام مارکیٹ سے مہنگے داموں خریدنے پر مجبور

عمرکوٹ: یوٹیلیٹی سٹورز سے آٹا غائب، عوام مارکیٹ سے مہنگے داموں خریدنے پر ...
عمرکوٹ: یوٹیلیٹی سٹورز سے آٹا غائب، عوام مارکیٹ سے مہنگے داموں خریدنے پر مجبور

  



عمرکوٹ(سید ریحان شبیر ) کورونا وائرس کی وجہ سے صوبہ سندھ کے علاقے عمر کوٹ اور اس کے گردونواح میں مسلسل چھ روز سے جاری لاک ڈائون سے غریب افراد شدید پریشان ہے جبکہ ضلع بھر کے آٹھ یوٹیلیٹی سٹورز پر گزشتہ ایک ماہ سے آٹا غائب ہے، غریب عوام آٹے کے لیے شدید پریشان اور مارکیٹ سے مہنگے داموں خریدنے پر مجبور ہیں۔ صورتحال کافوری نوٹس لے کر یوٹیلیٹی سٹورکو آٹا اور دیگر ضرورت کی اشیاء صرف فراہم کی جائے ۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان میں کورونا وائرس کی وبا پھیلنے کا خدشہ اسکے بچاو اور احتیاطی طورپرملک بھر میں لاک ڈائون کی صورتحال ہے جبکہ صوبہ سندھ کے علاقے عمرکوٹ میں گذشتہ چھے روز سےکاروبار، مارکیٹیں اور پبلک ٹرانسپورٹ مکمل طور پر بند ہے جسکی وجہ سے روزانہ اجرت پر کام کرنےوالے افراد سب زیادہ متاثر ہورہےہیں ایسے میں یوٹیلیٹی سٹور پر آٹے کا فقدان ہوتو مزید مشکلات بڑھ جاتی ہیں ۔ عمرکوٹ ضلع بھر میں آٹھ برانچز ہیں جس پر گذشتہ ایک ماہ سے آٹے کا بحران ہیں غریب عوام آٹے کیلئے دربدر ہورہی ہے ۔ 

گاؤں گوٹھوں کےلوگوں نےمیڈیاسے بات چیت کرتےہوئے کہا کہ وہ کافی دنوں سے یوٹیلیٹی اسٹور پر آٹا لینےآہ رہیں ہے لیکن یہاں پر آٹا موجود نہیں ہے مہنگے داموں آٹا خرید کرنے کی وسعت نہیں ہے۔  گذشتہ روز میڈیا نمائندگان سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم پاکستان عمران خان نےیوٹیلیٹی سٹورز کے لیے پچاس ارب روپےمختص کیے ہیں لیکن عمرکوٹ میں کئی دنوں سے آٹے کا شدید بحران ہے عوام مہنگے داموں آٹا خرید کرنے پر مجبور ہیں اگر عمرکوٹ میں اسی طرح سے آٹے کا بحران رہا تو یہاں کی عوام دوہرےعذاب میں مبتلا ہوجائے گی شہریوں نے مطالبہ کیا ہے کہ جلد سے جلد آٹے کے بحران پر قابو پایاجائے ۔

مزید : علاقائی /سندھ /عمرکوٹ