بارہ کہو کے بعد کورونا وائرس کا کیس سامنے آنے پر پاکستان کے ایک اور علاقے کو لاک ڈاﺅن کر دیا گیا

بارہ کہو کے بعد کورونا وائرس کا کیس سامنے آنے پر پاکستان کے ایک اور علاقے کو ...
بارہ کہو کے بعد کورونا وائرس کا کیس سامنے آنے پر پاکستان کے ایک اور علاقے کو لاک ڈاﺅن کر دیا گیا

  



صوابی (ڈیلی پاکستان آن لائن )اسلام آباد کے علاقے بارہ کہو کے بعد صوابی کے گاﺅں بادہ میں بھی کورونا وائرس کا کیس سامنے آنے کے بعد پورے گاﺅں کو لاک ڈاﺅن کر دیا گیاہے اور لوگوں کو گھروں میں رہنے کی ہدایت کی جارہی ہے ۔

نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق گزشتہ روز بادہ گاﺅں سے کورونا وائرس کا ایک کیس سامنے آیا تھا جس کے بعد اس شخص کے اہل خانہ کے 15 افراد کے نمونے ٹیسٹ کیلئے بھجوا دیئے گئے ہیں اور انہیں قرنطینہ کر دیا گیاہے ۔ ضلعی انتظامیہ نے اقداما ت اٹھاتے ہوئے گاﺅں کو مکمل طور پر لاک ڈاﺅن کر دیاہے ، پولیس کی بھاری نفری گاﺅں کے اطراف تعینات کر دی گئی ہے ۔

علاقے میں سے کسی کو باہر جانے اور کسی کو اندر آنے کی اجازت نہیں دی جارہی ہے ، انتظامیہ کی جانب سے اہل علاقہ کو گھروں میں رہنے کی ہدایت کی جارہی ہے ۔

یاد رہے کہ پاکستان میں مجموعی طور پر 1102 کیسز سامنے ا ٓ چکے ہیں جبکہ 8 افراد جان کی بازی ہار گئے ہیں تاہم 21 مریض اس مرض سے صحت یاب ہو کر گھروں کو بھی لوٹ گئے ہیں ۔

کورونا وائرس کے سب سے زیادہ کیسز سندھ میں ہیں جہاں تعداد 417 تک جا پہنچی ہے ، پنجاب میں 323 ، بلوچستان میں 131 ، کے پی کے میں 121 ، گلگت بلتستان میں 84 ، اسلام آباد میں 25 اور آزادکشمیر میں ایک شخص میں کورونا کی تشخیص ہوئی ہے۔

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /صوابی /کورونا وائرس