چودھری پرویز الٰہی سمجھدار آردمی ہیں توقع ہے اتحادی سیاسی فیصلہ کرینگے، اپوزیشن کو ایک سرپرائز مل گیا، دوسرا 27مارچ کو ملے گا: وفاقی وزراء 

  چودھری پرویز الٰہی سمجھدار آردمی ہیں توقع ہے اتحادی سیاسی فیصلہ کرینگے، ...

  

         اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی  نے کہا ہے کہ مجھے توقع ہے کہ اتحادی جماعتیں سیاسی فیصلہ کریں گی، میرے سیاسی حساب کتاب کے مطابق اتحادی جماعتوں کو ہمارا ساتھ دینا چاہئے،کسی کی ذات پر انگلی اٹھانا مناسب نہیں، وہ جملے ادا نہیں کرنے چاہئیں کہ کل کو آنکھ نہ ملا سکیں،چوہدری پرویز الہی سمجھدار آدمی ہیں،   ہم دیکھتے رہ گئے اور نواز شریف بیرون ملک چلے گئے،یہاں جو پلیٹلٹس گر گئے تھے وہ لندن جا کر ٹھیک ہو گئے، ن لیگ اور ق لیگ کا ایک ماضی ہے، ق لیگ کا ووٹر اپنی قیادت کو ن لیگ کے ساتھ بیٹھا دیکھ کر کیسا محسوس کرے گا، ن لیگ ق لیگ کو وزارت اعلی کی آفر کررہی ہے۔ اسلام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا  کہ اتحادی جماعتیں اپنی شوری سے مشاورت کررہی ہیں، مجھے توقع ہے کہ اتحادی جماعتیں سیاسی فیصلہ کریں گی، میرے سیاسی حساب کتاب کے مطابق اتحادی جماعتوں کو ہمارا ساتھ دینا چاہئے، سیاسی مخالفت میں ذاتیات پر باتیں نہیں ہونی چاہیئے، کسی کی ذات پر انگلی اٹھانا مناسب نہیں، وہ جملے ادا نہیں کرنے چاہئیں کہ کل کو آنکھ نہ ملا سکیں، میں اپنی پارٹی والوں سے بھی کہتا ہوں کہ تنقید فیصلوں پر کریں ذاتیات پر نہیں۔، ن لیگ اور ق لیگ کا ایک ماضی ہے، ق لیگ کا ووٹر اپنی قیادت کو ن لیگ کے ساتھ بیٹھا دیکھ کر کیسا محسوس کرے گا، ن لیگ ق لیگ کو وزارت اعلی کی آفر کررہی ہے، اقلیتی جماعت کا چیف منسٹر ہوا تو کابینہ کے فیصلوں پر اکثریتی جماعت اثرانداز ہوگی، یہ باتیں منطقی نہیں۔دوسری طرف وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا  ہے کہ اپوزیشن اور حکومت متفق تھے کہ معاملہ آئین اور قانون کے مطابق چلے گا، ابھی تو سرپرائز ز آنا باقی ہیں،آگے دیکھیے ہوتا ہے کیا۔ اپنے ایک بیان میں  فواد چوہدری نے کہا  کہ وزیراعظم عمرا ن خان کہہ چکے ہیں آخری پتا ہم نے کھیلنا ہے، جن لوگوں کو خیال تھا کہ عمران خان کو گرادیں گے انہیں ایک ہفتے میں پتہ چل جائے گا۔ ایک سرپرائز آج ملا، دوسرا 27مارچ کو ملے گا، اگلے 48 گھنٹے میں اتحادیوں کی طرف سے اعلان ہونے کا امکان ہے، لاکھوں لوگ جب نکلتے ہیں تو اس کا اثر ہی کچھ اور ہوتا ہے۔  شیریں مزاری نے اپوزیشن پر تنقید کرتے ہوئے کہاہے کہ یہ بوکھلائے ہوئے لگ رہے ہیں، پاگل سے لگ رہے ہیں۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر شیریں مزاری نے کہاکہ یہ بوکھلائے ہوئے لگ رہے ہیں، پاگل سے لگ رہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ شہباز شریف اپنے بھائی کی باتیں کہاں تک دبائیں گے،شہباز شریف خدا کا خوف کریں جادو کی باتیں کررہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ہم کسی کو نہیں خرید رہے، پنجاب ہاوس میں کسی کو بند نہیں کیا۔ انہوں نے کہاکہ اصل سوال یہ ہے مولانا فضل الرحمان کو کیا مل رہا ہے، مولانا فضل الرحمان کا مقصد ہے کہ پورے سسٹم کو گرا دیں وزیر مملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے کہاہے کہ عوام امانت کے طور پر ووٹ سیاسی جماعتوں کے نمائندوں دیتے ہیں،اس میں خیانت نہیں ہوسکتی، پاکستان کے قانون کے اندر ضمیر فروشوں،بھگوڑوں کا ہمیشہ ہمیشہ کیلئے راستہ بند ہونا چاہیے۔ جمعہ کو سپریم کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر مملکت اطلاعات و نشریات فرخ حبیب نے کہا کہ صدارتی ریفرنس اعلی عدلیہ کے سامنے ہے، عوام اس سوال کا جواب چاہتے ہیں، جنہوں نے ملک لوٹا ہو، کیسز ثابت ہوں،معاشرہ ان کے خلاف لڑتا ہے، یہاں پر پاپڑ والے،فالودے والے، مقصود چپڑاسٹی جیسے کرداروں کے ذریعے اربوں روپے کی ترسیل ہوتی ہے۔ وزیر مملکت نے کہاکہ عجیب تماشا ہے جس وزیراعظم کے خلاف عدم اعتماد جمع ہے اسکے خلاف کوئی کرپشن کا کیس نہیں ہے، جو عدم اعتماد لارہے ہیں وہ سب کرپٹ ہیں،سپیکر قومی اسمبلی نے کوئی غیر آئینی کام نہیں کیا، اپوزیشن کا رونا دھونا باقی رہ گیا ہے،اگر اپوزیشن کے پاس نمبر پورے ہیں تو کیوں ٹانگیں کانپ رہی ہیں، پہلے جلسوں پر پابندی کے لئے عدلیہ کے پاس گئے،اس پر کچھ نہ بنا تو اپنا مارچ 24سے 28کو لیکر چلے گئے ہیں، اپوزیشن کے جلسے میں کوئی نہیں آنے والا، 27مارچ کو پی ٹی آئی کے جلسے میں عوامی سمندر ہوگاوفاقی وزیر توانائی  حماد اظہر نے کہا ہے کہ ہم کرپٹ ٹولے کی سازش کو ناکام بنائیں گے، میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے  انہوں نے کہا کہ ہم نے اس ملک کو ایک خودمختار معیشت اور آزاد خارجہ پالیسی دینی ہے اور وزیر اعظم عمران خان نے کبھی ہارس ٹریڈنگ نہیں کی،انہوں نے کہا کہ لاہور کے شہریوں سے اپیل ہے یہ جنگ آپ کی ہے باہر نکلیں جبکہ سب نے سندھ ہاؤس میں ہارس  وفاقی وزیر ریلوے سینیٹر اعظم خان سواتی نے کہا کہ عمران خان نے پاکستان کو درست سمت گامزن کیا،اسلامی لیڈر کے طور پر پوری دنیا میں ایک سرخیل کا درجہ رکھتے ہیں،سیاسی بونے اور کرپٹ عناصر وزیراعظم کیخلاف کھڑے ہیں ان کا سیاسی کاروبار ٹھپ ہوگیا ہے یہ اپنی سیاسی موت مریں گے۔

وفاقی وزرا

مزید :

صفحہ اول -