گورنمنٹ گرلز ہائی سکول ایف بلاک وہاڑی،طالبات سے اضافی وصولیوں کا انکشاف، والدین کا احتجاج

گورنمنٹ گرلز ہائی سکول ایف بلاک وہاڑی،طالبات سے اضافی وصولیوں کا انکشاف، ...

  

 وہاڑی(بیورورپورٹ، نمائندہ خصوصی) گورنمنٹ کے تعلیمی ادارے فروغ تعلیم اور شرح خواندگی بڑھانے کیلئے(بقیہ نمبر13صفحہ6پر)

 سرکاری اخراجات پر چل رہے ہیں لیکن گورنمنٹ گرلز ہائی سکول ایف بلاک انتظامیہ نے اپنی سرکار قائم کرتے ہوئے غریب طالبات سے حیلے بہانوں سے اضافی وصولیاں کرنا معمول بنا لیا ہے بچیوں کے والدین غلام رسول، امجد چوہدری، محمد طارق، شرافت بلوچ محمد انور و دیگر نے سکول انتظامیہ کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ سکول انتظامیہ کی جانب سے آئے روز مختلف فنڈز کی مد میں ناجائز وصولی کا سلسلہ زوروں سے جاری ہے گزشتہ روز فی طالبہ 3 سو روپے سکول کو رنگ و روغن کروانے کی آڑ میں وصول کرنے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں سکول انتظامیہ غریب والدین پر اضافی بوجھ ڈال کر انہیں مزید پریشان کر رہی ہے مہنگائی کے اس دور میں گھریلو اخراجات پورا کرنا ہی محال ہو چکا ہے اور پیسے نہ دینے کی صورت میں بچیوں کو گرمی میں 3 تین گھنٹے کلاس روم سے باہر کھڑا کر کے انہیں اذیت دی جاتی ہے بچوں کی تعلیم پر اضافی خرچ کرنا مشکل ہے لیکن سکول انتظامیہ صرف کمائی کرنے کی غرض سے فی طالبہ 3 سو روپے دھڑلے اور ڈھٹائی سے وصول کرکے غریبوں کی خون پسینے کی کمائی سے جیبیں بھرنے میں مصروف ہے جو کہ بلا جواز، غیر قانونی اور رفاعہ عامہ کے مقاصد کے صریحا خلاف ہے والدین نے سکول انتظامیہ کے اس بدترین رویہ کے خلاف شدید احتجاج کرتے ہوئے وزیر اعلی پنجاب سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

احتجاج

مزید :

ملتان صفحہ آخر -