دوران پرواز سگریٹ پینے والے مسافر کو عدالت نے سزا سنادی، کتنے عرصے کیلئے جیل میں ڈال دیا؟ جان کر آپ بھی جہاز میں یہ کام کرنے کا سوچیں گے بھی نہیں

دوران پرواز سگریٹ پینے والے مسافر کو عدالت نے سزا سنادی، کتنے عرصے کیلئے جیل ...
دوران پرواز سگریٹ پینے والے مسافر کو عدالت نے سزا سنادی، کتنے عرصے کیلئے جیل میں ڈال دیا؟ جان کر آپ بھی جہاز میں یہ کام کرنے کا سوچیں گے بھی نہیں

  

لندن (نیوز ڈیسک) سگریٹ نوشی برا کام ہے اور جہاز میں سگریٹ نوشی کا شوق پورا کرنا صرف برا ہی نہیں بلکہ بے حد خطرناک کام بھی ہے۔ اس غیرذمہ دارانہ حرکت کا کیا نتیجہ برآمد ہو سکتا ہے، برطانوی شہر برمنگھم سے مصر کے سیاحتی مقام شرم الشیخ جانیوالی ایک پرواز کے دوران پیش آنیوالے افسوسناک واقعے سے اس کا اندازہ بآسانی کیا جا سکتا ہے۔ 

دی مرر کی رپورٹ کے مطابق اس پرواز میں مسافروں اور عملے سمیت تقریباً 200 افراد سوار تھے ۔ دورانِ پرواز ایک ریٹائرڈ برطانوی فوجی جان کاکس ٹوائلٹ میں گیا اور وہاں سگریٹ پینے کے بعد اس کا جلتا ہوا ٹکڑا کچرے کی ٹوکری میں پھینک کر باہر آگیا۔ کچھ دیر بعد ٹوئلٹ میں آگ بھڑک اٹھی، جس پر قابو پانے کیلئے دو سلنڈر اور کچھ پانی استعمال کرنا پڑا۔ پائلٹ نے سخت الفاظ میں وارننگ جاری کی اور بتایا کہ اب جہاز میں آگ بجھانے والے صرف چار سلنڈر باقی رہ گئے تھے۔ کچھ دیر بعد پائلٹ کو خبر ملی کہ دوسرے ٹوائلٹ میں بھی آگ بھڑک اٹھی ہے۔ یہ بھی جان کاکس کا ہی کارنامہ تھا۔ اسے بجھانے کیلئے مزید دو سلنڈر اور تقریبا ً ساڑھے چار لیٹر پانی استعمال کرنا پڑا۔ اب جہاز میں صرف دو ہی سلنڈر باقی بچے تھے اور دھوئیں کی وجہ سے بھی بے حد پریشانی پیدا ہو چکی تھی، لہٰذا پائلٹ نے کسی بھی متوقع ایمرجنسی سے بچنے کیلئے جہاز کو راستے میں اسکندریہ ائیرپورٹ پر اتارنے کا فیصلہ کر لیا ۔

جان کاکس کے خلاف غیر ذمہ درانہ رویے اور مسافروں کی جان کو خطرے میں ڈالنے کے الزامات کے تحت قانونی کارروائی کی گئی۔ اسے پانچ سال قید کی سزا سنائی گئی لیکن حال ہی میں اس کی سزا میں اضافے کے لئے عدالت کے سامنے درخواست پیش کی گئی ۔ عدالت نے بھی جان کاکس کو پہلے دی گئی سزا کو ’کچھ زیادہ ہی نرم‘ قرار دیا اور اس کی سزا کو دو گنا کرتے ہوئے 10 سال قید میں بدل دیا ہے ۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -