پنجاب کی مجوزہ تقسیم کے خلاف پنجابی پرچار کے زیراہتمام احتجاجی مظاہرہ

پنجاب کی مجوزہ تقسیم کے خلاف پنجابی پرچار کے زیراہتمام احتجاجی مظاہرہ

  

لاہور(خصوصی رپورٹ)لاہورپریس کلب کے باہر پنجابی پرچار کے زیراہتمام مظاہرے میں سینکڑوں افراد شریک ہوئے جو پنجاب کی مجوزہ تقسیم کے خلاف نعرے لگاتے رہے ، مظاہرے میں مختلف پنجابی تنظیمیں بھی شریک ہوئیں جن میں پاکستان پنجابی ادبی بورڈ ، دل دریا پاکستان ، پنجابی ادبی بیٹھک پنجابی کھوج گڑھ ، لوکائی ، پنجابی ادبی سنگت، ساڈا پنجاب ، پاکستان مزدور کسان پارٹی (پنجاب)سمیت دیگر تنظیمیں شامل ہوئیں ،جبکہ پنجاب بھر سے کارکنان کے علاوہ شاعر ، ادیب ، فنکار اور دیگر شعبہ ہائے ذندگی سے تعلق رکھنے والے افراد شریک ہوئے اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پنجابی پرچار کے صدر احمد رضا کا کہنا تھا بعض سیاسی پارٹیاں انتظامی بنیادوں کا شوشا چھوڑ کر اپنی سیاست چمکانے کی ناکام کوشش میں مصروف ہیں، پنجاب انتظامی لحاظ سے آج بھی باقی سبھی صوبوں سے بہتر پوزیشن میں ہے ، وسائل کی منصفانہ تقسیم کی بات کے بجائے تقسیم کا نعرہ ایک سیاسی چال ہے جس کے اثرات نا صرف پنجاب پر بلکہ پورے پاکستان پر بہت برے پڑیں گے اس سازش کے خلاف پورے پنجاب کے لوگوں کو سڑکوں پرلائیں گے ، پاکستان پنجابی ادبی بورڈ کے سربراہ مشتاق صوفی نے کہا کہ پنجاب کی زبان کو تقسیم کرنے کی کوشش کی جارہی ہے نئی ثقافت ہماری آنکھوں کے سامنے تخلیق کی جارہی ہے جو قابل قبول نہیں ہے پنجاب کی تقسیم کی سازش کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دی جائے گی

احتجاجی مظاہرہ

مزید :

علاقائی -