مقبوضہ کشمیر میں مکمل ہڑتال ، نظام زندگی مفلوج ، فوج سے جھٹرپوں میں متعدد نوجوان گرفتار

مقبوضہ کشمیر میں مکمل ہڑتال ، نظام زندگی مفلوج ، فوج سے جھٹرپوں میں متعدد ...

  

سرینگر(این این آئی)مقبوضہ کشمیر میں ممتاز مجاہد کمانڈر ذاکرموسیٰ اور ایک شہری ظہور احمد کی شہادت اور بھارتی جارحیت کے خلاف ہڑتال اور احتجاجی مظاہرے کئے گئے جس کے باعث نظام زندگی مفلوج ہو کر رہ گیا ۔ ہفتہ کوکشمیر میڈیاسروس کے مطابق ہڑتال کی کال کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے دی ۔ دکانیں ، پڑول پمپ اور دیگر کاروباری مراکز بند رہے جبکہ سڑکوں پر ٹریفک معطل رہا۔اس دور ان وادی کے مختلف علاقوں میں بھارتی فورسز کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے گئے ،مظاہروں کے دور ان پولیس اورمظاہرین میں جھڑپیں ہوئیں جس کے نتیجے میں متعدد افراد زخمی ہوگئے ، بھارتی فورسز اور پولیس نے کئی جوانوں کو گرفتار کرلیا ،بھارتی فوجیوں نے ذاکر موسی کو جمعرات کی شام ضلع پلوامہ کے علاقے ڈاڈسرا ترال میں ایک جھڑپ کے دوران ایک اور ساتھی کے ہمراہ شہید کر دیا تھا۔ مسلح بھارتی ایجنٹوں نے اسی روز ضلع پلوامہ کے علاقے نائیرا کے رہائشی ظہور احمد کو اغوا کرنے کے بعد قتل کر دیا تھا۔دریں اثنا قابض انتظامیہ نے ذاکر موسیٰ کی شہادت پر لوگوں کو احتجاجی مظاہروں سے روکنے کیلئے سرینگر، کولگام اور پلوامہ میں دوسر ے روز بھی کر فیو اورپابندیوں کا نفاذ برقرار رکھاہوا ہے۔ انتظامیہ نے مقبوضہ وادی بھر میں تعلیمی ادارے بھی بند کررکھے ہیں جبکہ انٹرنیٹ اور ریل سروسز بھی معطل رہی ۔

مقبوضہ کشمیر

مزید :

علاقائی -