ہربنس پورہ سے اغوا خاتون کے زبردستی بیان پر فریقین میں لڑائی

ہربنس پورہ سے اغوا خاتون کے زبردستی بیان پر فریقین میں لڑائی

  

لاہور(کرائم رپورٹر) ہربنس پورہ ہجویری سکیم کی رہائشی ارشما لاہور کی ایک مقامی یونیورسٹی کی طالبہ ہے کچھ عرصہ قبل اسے قاصد شاہ نے اپنے ساتھیوں کی مدد سے زبردستی اغواءکر کے نکاح پڑھ لیا جس کا مقدمہ تھانہ ٹاﺅن شپ میں درج رجسٹر ہوا ملزما ن نے متاثرہ خاندان کی منت سماجت کر کے مغویہ کو طلاق دیکر واپس ان کے حوالے کر دیا کچھ عرصہ گزرنے کے بعد قاصد شاہ نے دوبارہ ارشما کو اپنے ساتھیوں کی مدد سے اغواءکر لیا جس کا مقدمہ تھانہ ہربنس پورہ میں 409/19بجرم 365B درج رجسٹر ہے اس مقدمے کے بعد ملزمان گھروں کو تالے لگا کر فرار ہو گئے بعدازاں ہربنس پورہ پولیس نے ملزم قاصد شاہ کے والد ریاست شاہ کو حراست میں لیکر مغویہ کی برآمدگی کی کوشش کی تو ملزم ریاست شاہ نے ایک بار پھر مدعی پارٹی کی منت سماجت کر کے کہ اگر اسے رہا کر دیا جائے تو وہ چوبیس گھنٹے کے اندر مغویہ کو ان کے حوالے کر دے گا جھانسہ دیکر فرار ہو گیا ملزمان نے اچانک تھانہ ہربنس پورہ کے مقدمے میں عبوری ضمانت حاصل کر کے مغویہ کے بیان دلوانے کے لئے ماڈل ٹاﺅن کچہری سے رابطہ کیا جہاں ورثاءاطلاع ملنے پر پہنچے تو ملزمان نے ان پر دھاوا بول دیا اور انہیں شدید تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے مغویہ کی چچی کبری بی بی کا بازو توڑ ڈالامغویہ کی والدہ اور ایک دوسری رشتے دار خاتون کے دانت ٹوٹ گئے جبکہ مدعی اور چچا سے ملزمان نے 28ہزار500روپے نقدی اور ایک قیمتی موبائل فون بھی چھین لیا۔ متاثرہ خاندان نے الزام لگایا ہے کہ ان کا علاقہ کینٹ کچہری ہے ملزمان نے نصیر آباد پولیس سے ساز باز کر کے یہاں مغویہ کے بیان دلوانے کی کوشش کی ہے۔ واضح رہے ملزمان نے تھانہ ہربنس پورہ کے مقدمہ میں جو عبوری ضمانت حاصل کی تھی اب وہ بھی خارج ہو چکی ہے، جبکہ ملزمان مغویہ کے بیان دلوانے کے لیے اس سے قبل کینٹ کچہری اور ضلع کچہری میں بھی ناکام کوشش کر چکے ہیںجہاں ورثاءکے پہنچ جانے پر یہ بھاگ جاتے تھے ملزمان نے تھانہ ہربنس پورہ میں درج ہو نے والے مقدمے کے اخراج کے لیے ہائی کورٹ میں بھی رٹ دائر کر رکھی تھی جو کہ عدالت عالیہ نے خارج کردی ملزم قاصد کے مطابق ارشما اس کی بیوی ہے جبکہ ورثاءکے مطابق ارشماکو قاصد نے خاندان کے درجنوں افراد کی موجودگی میں طلاق دے دی تھی جس کا انھیں موثر سرٹیفکیٹ بھی مل چکا ہے ۔ہر بنس پورہ پولیس کے مطابق ملزم قاصد گنہگار ہے وہ انھیں مطلوب ہے وہ اسے دیگر ملزمان سمیت ہر حال میں گرفتار کر نا چاہتے ہیں۔اعلی افسران نے بھی ان کی گرفتاری کا حکم دے رکھاہے۔

مزید :

علاقائی -