اداکارہ ریما خان نے شوبز میں اپنی آمد کو حادثاتی قرار دیدیا

اداکارہ ریما خان نے شوبز میں اپنی آمد کو حادثاتی قرار دیدیا
 اداکارہ ریما خان نے شوبز میں اپنی آمد کو حادثاتی قرار دیدیا

  

لاہور(فلم رپورٹر)اداکارہ ریماخان نے کہاہے کہ فلم انڈسٹری میں میری آمد حادثاتی طور پر تھی کیونکہ میں نے کبھی اس بارے میں نہیں سوچاتھا لیکن مجھے اس پر بہت فخرہے۔ہمارے شعبے میں اکثر لوگ صرف پیسے اور شہرت کے پیچھے ہی بھاگتے ہیں لیکن ستاروں سے آگے جہاں اور بھی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مجھے پندرہ سولہ سال کی عمر میں ہی پہلی فلم ’بلندی‘ سے شہرت مل گئی۔”بلندی“کے ڈائریکٹر محمد جاوید فاضل تھے ۔میں بچپن میں شرارتی نہیں بلکہ کم گو تھی، میرے ابا بہت اچھی گفتگو کے ماہر تھے جن سے بہت کچھ سیکھا۔میں پیدا لاہور میں ہوئی لیکن تعلیم ملتان کانونٹ سے حاصل کی۔ ہم چار بہنیں اور ایک بھائی ہیں۔میری ایک بہن نے آکسفورڈ یونیورسٹی سے بینکنگ میں ماسٹرز کیا۔مجھے بھی پڑھنے کا شوق تھا لیکن اپنے بہن بھائیوں کو زیادہ پڑھایا۔میں نے بچپن میں والدین کو کبھی تنگ نہیں کیا۔میں نے کبھی نہیں سوچا تھا کہ پہلی ہی فلم سے شہرت کی بلندیوں پر پہنچ جاو¿ں گی۔میں اورشان آج بھی لوگوں کے دلوں میں زندہ ہیں۔ ہم نے اپنے سینئرز کی بہت عزت کی۔ مجھے کام مانگنے کے لئے کہیں نہیں جانا پڑتا کیونکہ کام خود گھرآجاتا ہے۔میں نے اپنے خواب سمیٹ کردوسروں کے سپنے پورے کئے۔میں تعلیم پوری نہیں کرسکی لیکن اپنی بہنوں کو اعلیٰ تعلیم دلوائی۔ ایک سوال کے جواب میں ریماخان ابا کومیرے شوبز میں جانے کا افسوس تھا جسے میں اپنے عمل سے درست ثابت کیا۔میں نے اچھا براکام دونوں کئے،میں خود ہی اپنی استادتھی۔میں نے ہمیشہ اپنی ذات کی نفی کی،اپنے آپ سے جنگ جیتنا دنیاکاسب سے مشکل کام ہے۔ ہررات سونے سے پہلے اپنااحتساب کرتی ہوں۔

،میں پڑھی لکھی نہیں لیکن تعلیم یافتہ ہوں،میرے پاس ڈگریاں نہیں ہیں لیکن مجھے اتنا پتہ ہے کہ اپنی عزت کیسے کرانی ہے اور دوسروں کی کیسے کرنی ہے۔

مزید :

کلچر -