”خیبر پختون خواہ میں عمران خان کے ویژن کے مطابق کام نہیں ہوا اور ۔۔“شاہد آفریدی بول پڑے

”خیبر پختون خواہ میں عمران خان کے ویژن کے مطابق کام نہیں ہوا اور ۔۔“شاہد ...
”خیبر پختون خواہ میں عمران خان کے ویژن کے مطابق کام نہیں ہوا اور ۔۔“شاہد آفریدی بول پڑے

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے خیبرپختون خواہ میں حکومت کی کارکردگی پر سوالات اٹھا دیئے ہیں اور کہاہے کہ وہاں عمران خان کے ویژن کے مطابق ڈیلیور نہیں کیا گیاہے ۔

نجی ٹی وی ” ہم نیوز “ کے پروگرام میں خصوصی گفتگو رکرتے ہوئے شاہد آفریدی کا کہناتھا کہ خیبرپختونخوا میں سات سال سے پاکستان تحریک انصاف کی حکومت ہے،عمران خان کو کے پی کے سے بہت سپورٹ ملی ہے ، میں یہ سمجھتاہوں کہ عمران خان کا جو ویژن ہے اس حساب سے ڈیلیور نہیں ہوا جس طرح ہونا چاہیے تھا ، ہیلتھ اور پولیس میں بہتری آئی ہے لیکن انفراسٹرکچر بہت ضروری ہے ۔

آنکھوں دیکھا حال بتاتے ہوئے شاہد آفریدی نے کہا خیبرپختونخوا میں پولیس اور صحت کے محکمے بہتر ہوئے ہیں لیکن انفراسٹرکچر بہتر کرنے کی ضرورت ہے کیوں کہ پہیہ چلے گا تو کام ہوگا۔ وہاں کی عوام نے عمران خان کو دوبارہ مینڈیٹ دیا ہے، ان کے پاس اب موقع ہے کہ ڈیلیورکر کے دکھائیں۔سیاست میں آنے کے متعلق سوال کا جواب دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اگر سیاست میں آنا ہوتا تو بہت پہلے آچکا ہوتا کیوں کہ بہت ساری جماعتیں پیشکش کر چکی ہیں۔ سیاستدان کا کام ہے حق دار کو اس کا حق دینا اور وہ میں کر رہا ہوں۔

شاہد آفریدی نے کہا مجھ سے کسی نے سوال کیا تھا کہ سات ماہ کیلئے وزیراعظم بننے کا موقع ملا تو کیا چیز بہترکریں گے۔ میں نے جواب دیا تھا تعلیم اور بے روزگاری بہتر ہے۔ شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کی کرسی کوئی مذاق نہیں، یہ بہت مشکل کام ہے۔شاہد آفریدی کا یہ بھی کہنا تھا کہ اگر میں وزیراعظم ہوتا توموجودہ صورتحال میں تمام اپوزیشن کو ساتھ لےکرچلتا کیونکہ گھر کا جو بڑا ہوتا ہے وہ بندوق نہیں اٹھاتا بلکہ سب کو ساتھ لےکرچلتا ہے۔

مزید :

کھیل -