طیارہ حادثے کی ابھی رپورٹ نہیں آئی لہذا ۔۔۔گورنر سندھ نے مشورہ دے دیا

طیارہ حادثے کی ابھی رپورٹ نہیں آئی لہذا ۔۔۔گورنر سندھ نے مشورہ دے دیا
طیارہ حادثے کی ابھی رپورٹ نہیں آئی لہذا ۔۔۔گورنر سندھ نے مشورہ دے دیا

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)گورنرسندھ عمران اسماعیل نےکہاہےکہ ایئرپورٹ کے اطراف جن اداروں اور ٹھیکداروں نے بلند عمارتیں بنوائیں،ان کے خلاف سخت ایکشن ہونا چاہیے،طیارہ حادثے کی رپورٹ سے متعلق سوشل میڈیا پر قیاس آرائیاں کی جا رہی ہیں، افواہوں پر یقین نہ کیا جائے۔

سول ہسپتال کے برنس وارڈ کے دورے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گورنر سندھ نے کہا کہ سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی (ایس بی سی اے) ایئرپورٹ کے اطراف میں بننے والی بلڈنگوں کا ذمہ دار ہے، دنیا کے کسی بھی ملک میں ایئرپورٹ کے اطراف میں 5، 5 منزلہ بلڈنگیں نہیں ہیں، ایئرپورٹ کے اطراف میں جن اداروں اور ٹھیکداروں نے بلند عمارتیں بنوائیں، ان کے خلاف سخت ایکشن ہونا چاہیے، ایس بی سی اے کو ٹھیک کرنا اور انکوائری میں شامل کیا جانا انتہائی ضروری ہے،یہ ادارہ وزیراعلیٰ کے ماتحت ہے،مراد علی شاہ ایس بی سی اے کو ٹھیک کریں، جہاں ہمارے تعاون کی ضرورت پڑی، ہم تعاون کریں گے۔

عمران اسماعیل نے بتایا کہ ڈی این اے کے ذریعے میتوں کی شناخت کا عمل جاری ہے، جہاں ورثا میت کی شناخت کر لیتے ہیں اسے فوری طور پر ریلیز کر دیا جاتا ہے،سندھ حکومت اور وفاق مل کر کوشش کر رہے ہیں کہ جلد از جلد لواحقین کو ان کے پیاروں کی میتیں حوالےکی جائیں،تمام حکام سےروزانہ کی بنیادپررابطے میں ہوں۔انہوں نےکہاکہ لاک ڈاؤن کوروناکاحل نہیں ہے، میں پہلےدن سےاس کامخالف ہوں،یہ اقدام وہاں کیاجاتاہےجہاں کوئی پلان ہو،پوری دنیاآج وہی بات کررہی ہے جو وزیراعظم پہلے دن سے کر رہے تھے۔گورنر سندھ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم نے متاثرین کو جلد سہولیات فراہم کرنے کی ہدایت کی ہے،طیارہ حادثےسےمتاثرہونیوالےگھروں کی تعمیرکےاخراجات حکومت برداشت کریگی۔ایک سوال کاجواب دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ رویت ہلال کمیٹی نے عید کے چاند کا اعلان کیا،وزیراعظم کا رویت ہلال کمیٹی ختم کرنے کا نہ کوئی پروگرام ہے نہ ہی وہ ایسا چاہتے ہیں۔

اس سے قبل گورنر سندھ عمران اسماعیل برنس سینٹر سول ہسپتال کراچی پہنچے اور وہاں طیارہ حادثے کے نتیجے میں زخمی خواتین سے ملاقات کی،گورنرسندھ نے ہسپتال انتظامیہ اور ڈاکٹرز کو ہدایت دی زخمی خواتین کے لئے علاج معالجے کے لئے ہر ممکن سہولیات فراہم کی جائیں۔ گورنرسندھ کچھ دیر زخمی خواتین کے ساتھ رہے اور طیارہ حادثے کے حوالے سے بات چیت بھی کی۔ ڈاکٹرز نے گورنرسندھ کو بتایا کہ طیارہ حادثہ سے متاثرہ گھر میں زخمی خواتین کام کرتی ہیں، جس وقت طیارہ حادثہ کا شکار ہوا تو متعلقہ گھر میں طیارہ کے ٹکڑے اور کھولتا ہوا تیل گرا جس کے باعث ماہرہ، ناہیدہ اور عزیزہ جھلس گئیں۔ اس موقع پر وزیر اعظم کی جانب سے رکن قومی اسمبلی آفتاب صدیقی اور محمود مولوی نے زخمی خواتین کے لئے 5 ، 5 لاکھ روپے کی امداد کا اعلان بھی کیا۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -