پی ٹی آئی کارکنوں کی گرفتاریوں کے خلاف درخواست پر سماعت ، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے سپریم کورٹ کے آرڈر پر عملدرآمد کا حکم دیدیا 

پی ٹی آئی کارکنوں کی گرفتاریوں کے خلاف درخواست پر سماعت ، چیف جسٹس اطہر من ...
پی ٹی آئی کارکنوں کی گرفتاریوں کے خلاف درخواست پر سماعت ، چیف جسٹس اطہر من اللہ نے سپریم کورٹ کے آرڈر پر عملدرآمد کا حکم دیدیا 

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )اسلام آباد ہائیکورٹ میں تحریک انصاف کے کارکن کامران ملک اور دیگر کی گرفتاریوں کے خلاف درخواست پر سماعت ہوئی ، عدالت نے سپریم کورٹ کے آرڈر پر عملدرآمد کا حکم دے دیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر نے پی ٹی آئی کارکنوں کی رہائی سے متعلق رپورٹ جمع کروائی ، رپورٹ میں کہا گیاہے کہ عدالتی حکم پر 23 افراد کو ضمانتی بانڈز لے کر چھوڑ دیا گیا ، 37 افراد کو جیل بھجوا دیا گیاہے ، کل سے کچھ ایسے واقعات ہوئے جس سے کافی نقصان ہوا۔اسلام آباد میں جلاﺅ گھیراﺅ کیا گیا ، آ گ لگائی گئی ، حالات کافی کشیدہ تھے ، شہر کے حالات کو دیکھتے ہوئے لوگوں کو حراست میں لیا گیا ۔

چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ جس کے خلاف ایف آئی آر ہو صرف اس کے خلاف کارروائی کریں، سپریم کورٹ کا آرڈر جو آ گیاہے ، مجھے سپریم کورٹ کے الفاظ دکھائیں ،ریمیڈی کو چھوڑ دیں ۔ ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ کل جب کچھ لوگوں کو چھوڑا گیا تو قیدیوں کی وین کو روکا گیا ، آرڈرمیں ریمیڈی کا کہا گیا تھا۔

مزید :

قومی -