ایک بالغ انسان کو کتنی نیند لینی چاہیے ؟ بالآخر پراسرار سوال کا جواب مل گیا

ایک بالغ انسان کو کتنی نیند لینی چاہیے ؟ بالآخر پراسرار سوال کا جواب مل گیا
ایک بالغ انسان کو کتنی نیند لینی چاہیے ؟ بالآخر پراسرار سوال کا جواب مل گیا

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) نیند ہمارے دماغ کی کارکردگی کو نارمل رکھنے کے لیے انتہائی ناگزیر ہے۔ نیند کے دوران ہمارا دماغ خود کو از سر نو منظم اور ’ری چارج‘ کرتا ہے۔ نیند میں ہی ہمارے جسم سے زہریلے فاسد مادے خارج ہوتے ہیں اور ہمارا مدافعتی نظام بہتر ہوتا ہے۔ یہاں یہ سوال پیدا ہوتا ہے کہ آیا ایک نارمل انسان کے لیے کتنی دیر سونا کافی ہوتا ہے؟ ویب سائٹ dailymaverick.co.za کے مطابق نئی تحقیق میں یونیورسٹی آف کیمبرج کے ماہرین نے اس سوال کا حتمی جواب دیتے ہوئے بتایا ہے کہ ایک بالغ انسان کے لیے ہر روز رات کو 7گھنٹے سونا کافی ہوتا ہے۔

ماہرین کی تحقیق میں یہ بات بھی سامنے آئی ہے کہ جہاں 7گھنٹے سے کم نیند انسان کی دماغی اور جسمانی کارکردگی پر منفی اثرات مرتب کرتی ہے۔ اسی طرح 7گھنٹے سے زیادہ سونا بھی نقصان دہ ہوتا ہے۔تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ پروفیسر باربرا جیکولین ساہیکیان کا کہنا تھا کہ ہم نے اس تحقیق میں ہزاروں لوگوں کے طبی ڈیٹا اور نیند کے معمول کا تجزیہ کیا جس میں معلوم ہوا کہ جو لوگ روزانہ 7گھنٹے سوتے تھے وہ 7گھنٹے سے کم یا زیادہ سونے والوں کی نسبت اوسطاً بہتر ذہنی اور جسمانی کارکردگی کے حامل تھے۔ تحقیق میں شامل لوگ 7گھنٹے سے جتنا کم یا زیادہ نیند لیتے تھے ان کی ذہنی و جسمانی کارکردگی اتنی ہی کم تھی۔واضح رہے کہ یہ تحقیقاتی رپورٹ نیچر ایجنگ نامی جریدے میں شائع ہوئی ہے۔

مزید :

تعلیم و صحت -