قوم ڈرون حملوں کی بندش کا مطالبہ کئی برس سے کررہی ہے کوئی شنوائی نہیںہورہی،وسیم اختر

قوم ڈرون حملوں کی بندش کا مطالبہ کئی برس سے کررہی ہے کوئی شنوائی ...

لاہور(سٹا ف رپورٹر)ممبر صوبائی اسمبلی وپارلیمانی لیڈر اور امیر جماعت اسلامی پنجاب ڈاکٹر سید وسیم اختراور سیکرٹری جنرل نذیر احمد جنجوعہ نے وزیر قانون پنجاب راناثناءاللہ کے بیان کہ”قوم ساتھ دے تو ڈرون گراسکتے ہیں“پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہاہے کہ پاکستانی قوم ڈرون حملوں کی بندش کا مطالبہ کئی برس سے کررہی ہے۔سابقہ پیپلز پارٹی کے دورحکومت میںجب مسلم لیگ(ن)اپوزیشن میں تھی تو اس وقت ڈرون حملوں کو ملکی سلامتی کے لئے خطرناک تصور کیاجاتا تھا اور آج جب وفاق میں نواز شریف کی حکومت ہے تو ڈرون حملوں پر قوم کوگمراہ کیاجارہا ہے۔پاکستان کے غیور عوام چاہتے ہیں کہ حکمران ڈرون حملوںکو بندکرانے کے لئے امریکہ کے سامنے دوٹوک انداز میں موقف رکھیں اگر وہ نہیں مانتا تو انہیں مارگرانے کا حکم دیاجائے۔انہوں نے کہاکہ امریکی نمائندگان کے ڈیموکریٹ رکن سینیٹر”فرینک پیلون“اس بات کا برملا اظہار میڈیاکے سامنے کرچکے ہیں کہ ڈرون حکومت پاکستان کی مرضی سے ہورہے ہیں۔حکمران ایک طرف ڈرون حملوںکے حوالے سے امریکہ کو معاونت فراہم کررہے ہیں تودوسری طرف جھوٹ بول کر عوام کے جذبات کو مجروح کیا جارہا ہے۔اب وقت آگیا ہے کہ گزشتہ ایک دہائی سے جاری جنگ جس میں پاکستان کے پچاس ہزاربے گناہ عام شہری،پانچ ہزار فوجی جوان شہید اور سو ارب ڈالر سے زائد کانقصان ہوچکا ہے سے فی الفور باہر نکلا جائے۔انہوں نے کہاکہ پاکستان کے تمام بڑے شہروں میں لوگ ڈرون حملوں کے خلاف ہونے والے مظاہروںمیں باہر نکل آئے ہیں۔8دسمبر کو لاہور میں ہونے والا دھرنا انشاءاللہ تاریخی ہوگا۔سابقہ حکومت کے دور میں ڈرون حملوں کی مخالفت کرنے والے حکومت ملتے ہی اپنے اصولی موقف سے پیچھے ہٹ چکے ہیں۔جماعت اسلامی کے رہنماﺅں نے مزید کہاکہ وہ لوگ جویہ کہتے ہیں کہ امریکہ واپس جاناچاہتا ہے اس لئے نیٹو سپلائی کو نہ روکا جائے وہ”لویہ جرگہ“ میں امریکہ کے ساتھ ہونے والے سکیورٹی معاہدے جس کے تحت امریکی فوج2014کے بعد بھی افغانستان میں رہے گی پرکیا کہیںگے؟۔امریکی غلام حکمرانوںنے پاکستان کو عملاً امریکہ کی طفیلی ریاست بنادیا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1