خیبرپختونخواہ میں سٹیٹ کے مقابلے سٹریٹ پاور کی حوصلہ افزائی کی جارہی ہے، چیف جسٹس اورآرمی چیف کی تقرری آئین کے مطابق ہوگی: وزیراطلاعات

خیبرپختونخواہ میں سٹیٹ کے مقابلے سٹریٹ پاور کی حوصلہ افزائی کی جارہی ہے، ...
خیبرپختونخواہ میں سٹیٹ کے مقابلے سٹریٹ پاور کی حوصلہ افزائی کی جارہی ہے، چیف جسٹس اورآرمی چیف کی تقرری آئین کے مطابق ہوگی: وزیراطلاعات

  

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وفاقی وزیراطلاعات پرویزرشید نے کہاہے کہ خیبرپختونخواہ میں سٹیٹ پاور کی بجائے سٹریٹ پاور کی حوصلہ افزائی کی جارہی ہے ، دھرنے قومی مفاد میں نہیں، فوج اور عدلیہ کے اعلیٰ عہدوں پر تعیناتی آئین وقانون کے مطابق ہوگی ۔ میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے پرویز رشید کاکہناتھاکہ حکومتی مشینری کاکام اُسی کوکرنے دیں ، تحریک انصاف کا اقدام لاقانونیت اور انارکی کی طرف جانے کے مترادف ہے ، ایسانہیں ہوناچاہیے کہ فیصلہ ایمپائر کی بجائے ہجوم کرے ۔وفاقی وزیرنے کہاہے کہ ریاست کے فیصلے ہجوم کے حوالے کیے جارہے ہیں جو لاقانونیت کی طرف پہلا قدم ہے ، گلی محلے کے لوگوں کو ریاستی اختیارات دیناپرچی بھتہ کے مترادف ہے ، ہرمحبت وطن پاکستانی کو ملک کو دلدل سے نکالنے کے لیے اپناکردار اداکرناچاہیے ۔اُن کاکہناتھاکہ پاکستان کے کئی ممالک کے ساتھ تجارتی اور بین الاقوامی معاہدے ہیں، تحریک انصاف کے اقدام سے ملک کی بے عزتی ہورہی ہے ۔پرویز رشید نے بتایاکہ چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی ، آرمی چیف اور چیف جسٹس کاتقررآئین و قانون کے مطابق ہوگا، آئین وزیراعظم کو بھی کچھ اختیارات دیتاہے جسے وہ استعمال کریں گے۔ایک سوال کے جواب میں اُن کاکہناتھاکہ اگر چیف جسٹس کی مدت ملازمت میں توسیع کا معاملہ ہواتوآئین کے مطابق دیکھیں گے ۔

مزید : اسلام آباد /اہم خبریں