’’ہم چاہتے ہیں فوج کی بابا جی سے ایک ملاقات ہوجائے اورپھر۔ ۔ ۔‘‘ تحریک لبیک نے پیغام جاری کردیا

’’ہم چاہتے ہیں فوج کی بابا جی سے ایک ملاقات ہوجائے اورپھر۔ ۔ ۔‘‘ تحریک ...
’’ہم چاہتے ہیں فوج کی بابا جی سے ایک ملاقات ہوجائے اورپھر۔ ۔ ۔‘‘ تحریک لبیک نے پیغام جاری کردیا

  

لاہور(ویب ڈیسک)سوشل میڈیا پر پابندی کے باوجود تحریک لبیک پراکسی لگا کر فیس بک پر اپنے پیغامات جاری کرنے میں کامیاب ہوگئی ہے،مبینہ طور علامہ خادم حسین رضوی کے زیر سایہ چلنے والا رضوی میڈیا قومی میڈیا پر انحصار کرنے کی بجائے اپنے پیجز سے لائیو اور تحریری بیانات جاری کررہاہے  اور  اپنے تازہ سٹیٹس میں پیغام جاری کیا ہے کہ پاک فوج نے بیان دیا ہے کہ دھرنے کے بارے حکومت جو بھی فیصلہ کرے گی ہم اس پہ عمل کریں گے اس سے قادیانی اور قادیانی نواز چھلانگیں مار رہے ہیں کہ شاید حکومت فوج کو بلا کر دھرنا ختم کروائے گی ،پہلی بات تو یہ ہے کہ نہ حکومت فوج کو بلاسکتی ہے اور نہ ہی فوج انکے کہنے پہ پاکستانیوں کو نقصان پہنچا سکتی ہے ،بالفرض اگر فوج کو بلایا بھی گیا اور فوج آ بھی گئی تو فوج بھی پہلے مذاکرات ہی کرے گی اور ہم تو چاہتے ہی یہی ہیں کہ فوج کی بابا جی سے ایک ملاقات ہوجائے ۔ اور فوج ایسے ہی ہمیں نہیں اٹھائے گی بلکہ کچھ ہمارے مطالبات مانے گی تو کچھ اپنے منوائے گی اور ہمارا مطالبہ فوج سے صرف زاہد حامد کو ہٹانے کا نہیں ہوگا ہم سب معاملات فوج کو بتا کر سمجھا کر زاہد حامد سمیت اور بھی بہت سے کرداروں کو سزا دلوائیں گے اور اگر ہماری بات فوج نے نہ مانی تو ہم شہادت کے لیے خود کو پیش کردیں گے ۔ 

مزید : لاہور